بنگلہ دیش کی پاکستان کے خلاف تاریخی فتح

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سنہ 2011 کے بعد دونوں ممالک کے درمیان یہ ایک روزہ میچوں کی پہلی دو طرفہ سیریز ہے

میر پور میں کھیلے جانے والے تین میچوں کی سیریز میں بنگلہ دیش نے پاکستان کو 79 رنز سے شکست دے کر سیریز میں برتری حاصل کر لی ہے۔

اس سے پہلے بنگلہ دیش نے آخری بار 1999 کے ورلڈ کپ میں پاکستان کو شکست دی تھی۔

بنگلہ دیش نے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ پچاس اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 329 رنز بنائے اور جواب میں پاکستانی ٹیم 45.2 اوورز میں 250 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان کی جانب سے اظہر علی اور حارث سہیل نے تیسری وکٹ کی شراکت میں 89 رنز بنائے۔ اسی دوران اظہر علی نے اپنی نصف سنچری بھی مکمل کی۔

پاکستان کے آؤٹ ہونے والے کھلاڑیوں میں اظہر علی نے 72، حارث سہیل نے 51، سرفراز احمد نے 24 ، فواد عالم نے 14، محمد حفیظ نے چار اور سعد نسیم نے صفر رن بنائے جبکہ اپنا پہلا ایک روزہ میچ کھیلنے والے محمد رضوان نے 67 رنزبنائے۔

بنگلہ دیش کی جانب سے تسکین احمد اور عرفات سنی نے تین تین کھلاڑی آؤٹ کیے۔

اس سے پہلے بنگلہ دیش نے پاکستان کو جیتنے کے لیے 330 رنز کا ہدف دیا۔

بنگلہ دیش نے مقررہ 50 اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 329 رنز بنائے۔

بنگلہ دیش کی اننگز کی خاص بات تمیم اقبال اور مشفق الرحیم کی شاندار سنچریاں تھیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption تمیم اقبال نے 15 چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 132 جبکہ مشفق الرحیم نے 13 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 106 رنز بنائے

تمیم اقبال نے 15 چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 132 جبکہ مشفق الرحیم نے 13 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 106 رنز بنائے۔

میزبان ٹیم کی جانب سے تمیم اقبال اور سومیا سرکار نے اننگز شروع کی اور ٹیم کو 48 رنز کا اچھا آغاز دیا۔

یہ شراکت اس وقت ٹوٹی جب وہاب ریاض نے سومیا کو رن آؤٹ کر دیا، وہ 20 رنز بنا سکے۔

پاکستان کی جانب سے وہاب ریاض نے چار اور راحت علی نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

خیال رہے کہ غیرقانونی بولنگ ایکشن کے باعث معطلی کے بعد واپس آنے والے سعید اجمل نے دس اووروں میں بغیر کوئی وکٹ لیے 74 رنز دیے، جو ان کے کریئر کی مہنگی ترین بولنگ ہے۔

پاکستان کے لیے سعد نسیم اور محمد رضوان نے اس میچ سے اپنے ایک روزہ بین الاقوامی کریئر کا آغاز کیا۔

سابق کپتان مصباح الحق اور شاہد آفریدی کی ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے بعد پاکستانی ٹیم اپنے نئے کپتان اظہر علی کی قیادت میں پہلا ایک روزہ میچ کھیل رہی تھی۔

یہ اظہر علی کا بھی 27 ماہ کے بعد پہلا ایک روزہ بین الاقوامی میچ تھا۔

بنگلہ دیش کے کپتان مشرفی مرتضیٰ کی ایک میچ کے لیے معطلی کے سبب شکیب الحسن نے اس میچ میں بنگلہ دیشی ٹیم کی قیادت کی۔

دونوں ممالک کے درمیان سنہ 2011 کے بعد یہ ایک روزہ میچوں کی پہلی باہمی سیریز ہے۔

بنگلہ دیش اور پاکستان کے درمیان اب تک 32 ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ میچ کھیلے جا چکے ہیں جن میں سے پاکستان نے 31 میچ جیتے ہیں۔

بنگلہ دیش کو واحد کامیابی 16 برس قبل سنہ 1999 کے عالمی کپ میں ملی تھی جب اس نے پاکستان کو 62 رنز سے شکست دی تھی۔

اسی بارے میں