بنگلہ دیش ٹیسٹ کرکٹ میں بھی تاریخ بدلنے کے لیے تیار

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ٹیسٹ میں پاکستانی بیٹنگ لائن نسبتاً زیادہ مضبوط ہے جس میں اظہرعلی، یونس خان، مصباح الحق ، اسد شفیق اور سرفراز احمد شامل ہیں۔

پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان پہلا کرکٹ ٹیسٹ میچ منگل سے کھلنا کے شیخ ابو نصر اسٹیڈیم میں شروع ہورہا ہے۔

بنگلہ دیشی ٹیم کے حوصلے پاکستان کو ون ڈے سیریز میں کلین سوئپ اور واحد ٹی 20 میں ہرانے کے بعد بلند دکھائی دیتے ہیں اور وہ 14 سال میں پہلی بار پاکستان کو ٹیسٹ میں ہرانے کے بارے میں سوچ رہی ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان اب تک 14 ٹیسٹ میچ کھیلے جاچکے ہیں اور تمام کے تمام پاکستان نے جیتے ہیں۔

ون ڈے انٹرنیشنل کو خیرباد کہنے والے مصباح الحق ٹیسٹ سیریز میں پاکستانی ٹیم کی قیادت کررہے ہیں تاہم محدود اوورز کے میچوں میں ٹیم کی مایوس کن کارکردگی نے ٹیسٹ سیریز میں بھی پاکستانی ٹیم پر دباؤ میں اضافہ کردیا ہے۔

ون ڈے کے مقابلے میں ٹیسٹ میں پاکستانی بیٹنگ لائن نسبتاً زیادہ مضبوط ہے جس میں اظہرعلی، یونس خان، مصباح الحق ، اسد شفیق اور سرفراز احمد شامل ہیں۔

یونس خان ورلڈ کپ میں مایوس کن کارکردگی کے بعد ون ڈے ٹیم سے باہر کردیے گئے تھے لیکن شائقین کو آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں ان کی شاندار بیٹنگ ابھی بھی یاد ہے ۔

اسد شفیق بنگلہ دیش کے خلاف ون ڈے سیریز کی ٹیم میں شامل تھے لیکن انھیں کسی میچ میں کھیلنے کا موقع نہیں مل سکا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption زمبابوے کے خلاف اس نے شکیب الحسن کی سنچری اور دس وکٹوں کی شاندار آل راؤنڈ کارکردگی کی بدولت 162 رنز سے کامیابی حاصل کی تھی۔

بائیں ہاتھ کے اوپنر سمیع اسلم کو ٹیسٹ کیپ دیے جانے کا امکان ہے۔ وہ تیسرے ون ڈے انٹرنیشنل میں کھیلے تھے اور انھوں نے 45 رنز اسکور کیے تھے لیکن محمد حفیظ کی موجودہ خراب فارم ٹیم کے لیے تشویش کا باعث بنی ہوئی ہے۔

کپتان مصباح الحق کے لیے آف اسپنر سعید اجمل پر اعتماد کرنا خاصا مشکل فیصلہ ہوگا جو بنگلہ دیش کے خلاف ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی میں اپنے نئے بولنگ ایکشن کے ساتھ غیرموثر ثابت ہوئے ہیں۔

مبصرین کا خیال ہے کہ سعید اجمل کے بجائے ذوالفقار بابر اور یاسر شاہ ٹیسٹ سیریز میں زیادہ موثر ثابت ہوسکیں گے۔

ان دونوں نے گذشتہ برس آسٹریلیا کے خلاف کلین سوئپ میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

پاکستانی ٹیم اس دورے میں کھلاڑیوں کے فٹنس مسائل سے دوچار رہی ہے۔ فاسٹ بولرز سہیل خان، احسان عادل اور راحت علی ان فٹ ہوکر دورے سے باہر ہوچکے ہیں۔

سلیکٹرز نے عمران خان کو ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا ہے تاہم توقع یہی ہے کہ ٹیم منیجمنٹ تجربہ کار بولر وہاب ریاض اور جنید خان پر انحصار کرےگی۔

کھلنا میں پاکستانی ٹیم پہلی بار ٹیسٹ میچ کھیل رہی ہے۔

اس میدان میں بنگلہ دیش نے دو ٹیسٹ میچ کھیلے ہیں۔ ویسٹ انڈیز کے خلاف اسے دس وکٹوں سے شکست ہوئی تھی جبکہ زمبابوے کے خلاف اس نے شکیب الحسن کی سنچری اور دس وکٹوں کی شاندار آل راؤنڈ کارکردگی کی بدولت 162 رنز سے کامیابی حاصل کی تھی۔

اسی بارے میں