ٹیسٹ میچ میں تلخ کلامی پر وہاب اور شکیب کو جرمانہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ’شکیب الحسن نے وہاب ریاض پر وکٹ خراب کرنے کا الزام عائد کیا تھا جس کے بعد دونوں میں تلخ کلامی ہوئی‘

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے کھلنا ٹیسٹ میچ کے آخری روز تلخ کلامی پر پاکستانی بولر وہاب ریاض اور بنگلہ دیش کے آل راؤنڈر شکیب الحسن کو میچ فیس کا 30 فیصد جرمانہ کیا ہے۔

آئی سی سی کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق آئی سی سی کے ایلیٹ پینل کے میچ ریفری جیف کرو نے آئی سی سی کے ضابط اخلاق کے آرٹیکل 2.1.8 (a) کے تحت دونوں کھلاڑیوں کو جرمانہ کیا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ کھلنا ٹیسٹ میچ میں بنگلہ دیش کی دوسری اننگز کے دوران 118ویں اوور میں دونوں کھلاڑیوں نے ایک دوسرے سے بحث کرتے ہوئے اور انگلیاں دکھاتے ہوئے میچ کو روک دیا۔

دونوں کھلاڑیوں نے اپنی اپنی غلطی کا اعتراف کرتے ہوئے جرمانے کو قبول کر لیا ہے اور اس وجہ سے اس واقعے پر مزید کارروائی کی ضرورت نہیں ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption شکیب الحسن دوسری اننگز میں 76 رنز پر ناٹ آؤٹ رہے تھے

میچ ریفری جیف کرو کے فیصلے کے مطابق’ غیر مناسب رویہ اور ایک دوسرے کے چہرے کی جانب انگلیاں اٹھانے کی بین الاقوامی کرکٹ کے دو سینیئر کھلاڑیوں سے توقع نہیں کی جا سکتی اور نہ کرکٹ میں اس کی گنجائش ہے۔ بین الاقوامی کرکٹ میں ہمیشہ یاد رکھنا چاہیے کہ اسے لاکھوں شائقین کرکٹ دیکھ رہے ہوتے ہیں اور یہاں ہمیشہ اپنے جذبات کو قابو میں رکھنا چاہیے اور احترام کا مظاہرہ کرنا چاہیے۔‘

بیان میں واضح نہیں کیا گیا کہ دونوں کھلاڑیوں کے درمیان کس بات پر تلخ کلامی ہوئی تاہم فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق شکیب الحسن نے وہاب ریاض پر وکٹ خراب کرنے کا الزام عائد کیا تھا جس کے بعد دونوں میں تلخ کلامی ہوئی۔

کھلنا میں دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا ٹیسٹ میچ بغیر کسی نتیجے کے ختم ہو گیا۔

اسی بارے میں