چگمبورا سلو اوور ریٹ پر دو میچوں کے لیے معطل

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption چگمبورا اگر ایک سال کے دوران دوبارہ سلو اووریٹ کی سنگین خلاف ورزی کے مرتکب پائے گئے تو ان پر دو سے لے کر آٹھ تک معطلی پوائنٹس عائد کیے جائیں گے

زمبابوے کی کرکٹ ٹیم کے کپتان ایلٹن چگمبورا کو سلو اوور ریٹ کے سبب دو میچوں کے لیے معطل کردیا گیا ہے جس کے بعد وہ پاکستان کے خلاف آخری دو ون ڈے انٹرنیشنل نہیں کھیل سکیں گے۔

پاکستان اور زمبابوے کے درمیان لاہور میں کھیلے گئے پہلے ون ڈے انٹرنیشنل میں زمبابوے کے بولرز نے مقررہ 50 اوورز کرانے میں کافی وقت ضائع کیا تھا جس پر آئی سی سی کے قواعد و ضوابط کے مطابق کارروائی کرتے ہوئے کپتان چگمبورا کو قصور وار ٹھہرایا گیا اور یہ سلو اوور ریٹ کے ضمن میں سنگین خلاف ورزی تھی لہذا ان پر دو معطلی پوائنٹس عائد کیے گئے جس کی رو سے وہ دو ون ڈے میچز نہیں کھیل سکتے۔

زمبابوے کی ٹیم کے ہر کھلاڑی پر میچ فیس کا 40 فیصد جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔

چگمبورا اگر ایک سال کے دوران دوبارہ سلو اووریٹ کی سنگین خلاف ورزی کے مرتکب پائے گئے تو ان پر دو سے لے کر آٹھ تک معطلی پوائنٹس عائد کیے جائیں گے۔

چگمبورا نے پہلے ون ڈے انٹرنیشنل میں شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے اپنی پہلی ون ڈے سنچری بھی سکور کی تھی۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ چگمبورا کے خلاف یہ کارروائی میچ کے امپائرز رسل ٹفن اور علیم ڈار کی رپورٹ کی روشنی میں آئی سی سی میچ ریفری روشن مہاناما نے کی ہے جو خود پاکستان میں موجود نہیں ہیں کیونکہ آئی سی سی نے زمبابوے کی ٹیم کے دورۂ پاکستان کے لیے اپنے میچ آفیشلز نہیں بھیجے ہیں۔

پاکستان کے سابق ٹیسٹ کرکٹر اظہرخان ان میچوں میں میچ ریفری کے فرائض انجام دے رہے ہیں تاہم اس سیریز میں ڈسپلن کے کسی بھی معاملے پر نظر رکھنے کے لیے آئی سی سی نے روشن مہاناما کو ذمہ داری سونپ رکھی ہے۔

اسی بارے میں