عامر خان کی فتح، مےویدر سے مقابلے کی خواہش

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption دو دفعہ لائٹ ویلٹر ویٹ کے عالمی چمپئین رہنے وال عامر خان کو جمعے کو نیویارک میں ہونے والے مقابلے میں اپنے مخالف الجیری کی جانب سے سخت مقابلے کا سامنا رہا

پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان نے جمعے کو نیویارک میں ہونے والے ایک مقابلے میں اپنے امریکی حریف کرس الجیری کو پوائنٹس کی بنیاد پر شکست دے دی اور اب وہ امریکی باکسر فلائیڈ مے ویدر سے لڑنے کے خواہش مند ہیں۔

ججوں نے عامر خان کو 111-117، 111-117 اور 113-115 سے فاتح قرار دیا۔

28 سالہ عامر خان کی یہ مسلسل پانچویں فتح ہے اور وہ اب گزشتہ 48 مقابلوں میں ناقابلِ شکست رہنے والےعالمی چیمپئن مے ویدر کو شکست دینا چاہتے ہیں۔

مقابلے کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’ عامر خان مے ویدر سے لڑنا چاہتا ہے، میری خواہش ہے کہ اگلا مقابلہ ان سے ہو۔ میں ورلڈ باکسنگ کونسل کا نمبر ون چیلنجر ہوں اور مے ویدر چیمپئین ہے لہذا یہ مقابلہ اب ہونا چاہیے۔‘

واضع رہے کہ اس ماہ کے اوائل میں امریکہ کے شہر لاس ویگاس میں مے ویدر نے باکسنگ کے اہم مقابلے جسے ’فائٹ آف دا سنچری‘ یعنی صدی کے سب سے بڑے مقابلہ کہاگیا تھا میں میني پیكاؤ کو شکست دے کر ڈبلیو بی او ویلٹر ویٹ ٹائٹل اپنے نام کر لیا تھا۔ ڈبلیو بی سی اور ڈبلیو بی اے کے ٹائٹل پہلے ہی سے ان کے پاس ہیں۔

38 سالہ مے ویدر نے، جو اس سے سال ریٹائر ہونے کا اعلان کر چکے ہیں،گزشتہ برس بھی عامر خان کی جانب سے مقابلے کی پیشکش کو ٹھکرا دیا تھا۔

دو دفعہ لائٹ ویلٹر ویٹ کے عالمی چمپئین رہنے وال عامر خان کو جمعے کو نیویارک میں ہونے والے مقابلے میں اپنے مخالف الجیری کی جانب سے سخت مقابلے کا سامنا رہا۔

اس حوالے سے جب ان سے ایک سوال پوچھاگیا تو ان کا کہنا تھا کہ ’وہ بھی لڑنے آیا تھا اور جیتنا چاہتا تھا، اس کو مقامی شائقین کی حمایت بھی حاصل تھی لیکن میں یہاں جیتنے آیا تھا اور شائقین کی جانب سے الجیری کی حمایت نے مجھے اور گرما دیا۔‘

اسی بارے میں