کنگسٹن ٹیسٹ میں آسٹریلیا کی پوزیشن مزید مضبوط

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مچل سٹارک نے دوسری اننگز کے آغاز میں ہی آسٹریلوی ٹیم کو دوہری کامیابی دلوائی

ویسٹ انڈیز کے خلاف دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن آسٹریلوی ٹیم کی پوزیشن مزید مضبوط ہوگئی ہے اور اس نے میزبان ٹیم کو فتح کے لیے 392 رنز کا ہدف دیا ہے۔

کنگسٹن میں سنیچر کو کھیل کے اختتام پر ویسٹ انڈیز نے اس ہدف کے تعاقب میں اپنی دوسری اننگز میں دو وکٹوں کے نقصان پر 16 رنز بنا لیے تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

ویسٹ انڈیز کے آؤٹ ہونے والے بلے بازوں میں چندریکا اور بریتھویٹ شامل تھے۔ چندریکا کو اپنے پہلے ہی ٹیسٹ میچ میں پیئر (دونوں اننگز میں صفر پر آؤٹ ہونا) کی خفت اٹھانا پڑی۔

ان دونوں بلے بازوں کو مچل سٹارک نے ایک ہی اوور میں آؤٹ کیا۔ جب کھیل ختم ہوا تو شین ڈورچ اور ڈیرن براوو کریز پر موجود تھے۔

اس سے قبل آسٹریلیا نے اپنی دوسری اننگز میں دو وکٹوں کے نقصان پر 212 رنز بنا کر ختم کر دی یوں اسے ویسٹ انڈیز پر 391 رنز کی مجموعی برتری حاصل ہوئی۔

دوسری اننگز میں آسٹریلیا کے دونوں اوپنرز نے نصف سنچریاں بنائیں اور ٹیم کو 117 رنز کا آغاز دیا۔ شان مارش 69 اور ڈیوڈ وارنر 62 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔

ہولڈر کی جارحانہ اننگز

اس سے قبل پہلی اننگز میں مشکلات میں گھری ویسٹ انڈیز کی ٹیم جیسن ہولڈر کی جارحانہ بلے بازی کی بدولت 220 رنز بنانے میں کامیاب رہی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption جیسن ہولڈر نے 63 گیندوں پر 12 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 88 رنز کی اہم اننگز کھیلی

ویسٹ انڈیز کی جانب سے ہولڈر اور کیمار روچ نے سنیچر کو آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 148 رنز سے جب ویسٹ انڈیز کی پہلی اننگز دوبارہ شروع کی تو ٹیم کے سر پر فالوآن کا خطرہ منڈلا رہا تھا۔

تاہم ہولڈر نے نہ صرف 63 گیندوں پر 12 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 88 رنز کی اہم اننگز کھیلی بلکہ نویں وکٹ کے لیے ٹیم کے سکور میں 77 قیمتی رنز کا اضافہ بھی کیا۔

آسٹریلیا کی جانب سے جوش ہیزل وڈ نے پانچ کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ نیتھن لیون کے حصے میں تین وکٹیں آئیں۔

جمعرات کو شروع ہونے والے اس ٹیسٹ میچ میں ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر آسٹریلیا کو پہلے بیٹنگ کرنے کی دعوت دی تھی۔

آسٹریلیا کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں 399 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔ اس اننگز کی خاص بات سٹیون سمتھ کی شاندار بیٹنگ تھی جنھوں نے 21 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 199 رنز بنائے۔

دو ٹیسٹ میچوں پر مشتمل اس سیریز میں آسٹریلیا کو ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔

روسو میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا نے ویسٹ انڈیز کو نو وکٹوں سے شکست دی تھی۔

اسی بارے میں