بھارت کو بنگلہ دیش کے ہاتھوں لگاتار دوسری شکست

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بنگلہ دیش کے مستفیض الرحمٰن کو میچ آف دی میچ قرار دیا گیا

بنگلہ دیش کے خلاف ایک روزہ کرکٹ میچوں کی سیریز کے دوسرے میچ میں بھی بھارت کو میزبان ٹیم کے ہاتھوں شکست کا منہ دیکھنا پڑا ہے۔

ڈھاکہ میں کھیلے جانے والے دوسرے ایک روزہ کرکٹ میچ میں بنگلہ دیش نے ڈک ورتھ لوئس میتھڈ کے تحت چھ وکٹوں سے فتح حاصل کی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

اس فتح کے نتیجے میں اسے تین میچوں کی سیریز میں دو صفر کی فیصلہ کن برتری حاصل ہوگئی ہے۔

بارش سے متاثر ہونے والے اس میچ میں بھارت کی ٹیم پہلے کھیلتے ہوئے 45 ویں اوور میں 200 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی تھی۔

ڈک ورتھ لوئیس نظام کے تحت بنگلہ دیش کو جیتنے کے لیے47 اوورز میں 199 رنز کا ہدف دیا گیا جسے میزبان ٹیم نے 38 ویں اوور میں ہی حاصل کر لیا۔

بنگلہ دیش کی جانب سے شکیب الحسن نے پانچ چوکوں کی مدد سے 51 جبکہ لٹن داس نے پانچ چوکوں کی مدد سے 36 رنز بنائے اور اپنی ٹیم کو فتح دلوانے میں اہم کردار ادا کیا۔

بھارت کی جانب سے دھول کلکرنی، ایشون اور پاٹل نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

اس سے پہلے بھارتی ٹیم اپنا دوسرا ہی میچ کھیلنے والے نوجوان بالر مستفیض الرحمان کی تباہ کن بولنگ کے سامنے بے بس نظر آئی۔

پہلے میچ میں بھارت کے خلاف پانچ وکٹیں لینے والے مستفیض نے اس میچ میں چھ وکٹیں لیں اور انھیں اس شاندار کارکردگی پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

بھارت نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور شیکھر دھون اور کپتان مہندر دھونی کے علاوہ کوئی زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹھہر سکا اور وکٹیں گرنے کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری رہا۔

بھارت کے پانچ بیٹسمینوں کا ہدف دوہرے ہندسوں تک بھی نہ پہنچ سکا۔

بنگلہ دیش کی جانب سے مستفیض الرحمٰن کے علاوہ ناصر حسین اور روبیل حسین نے بھی عمدہ بولنگ کی اور دو، دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

بھارتی اننگز کے دوران دو مرتبہ بارش کی وجہ سے میچ بھی روکنا پڑا۔

اس فتح کے نتیجے میں بنگلہ دیش کی سنہ 2017 کی چیمپیئنز ٹرافی میں شرکت یقینی ہوگئی ہے اور آٹھویں اور آخری ٹیم بننے کے لیے اب پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان مقابلہ ہے۔

اسی بارے میں