انگلینڈ ٹیم کو پرانا جذبہ جگانا ہوگا: ایلسٹر کک

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption یہ سب سے بڑی سیریز ہے جو ایک کھلاڑی کی حیثیت سے آپ کھیلنا چاہتے ہیں

آسٹریلیا اور انگلینڈ کے درمیان بدھ سے کارڈف میں شروع ہونے والی ایشز ٹیسٹ سیریز سے قبل انگلینڈ کے کپتان ایلسٹر کک نے اپنے کھلاڑیوں کو سنہ 2005 والا جوش اور جذبہ دوبارہ جگانے کی تاکید کی ہے۔

دس سال قبل انگلینڈ نے آسٹریلیا کے خلاف ایک سنسنی خیز مقابلے کے بعد دو ایک سے سیریز میں کامیابی حاصل کی تھی۔ اس کے بعد سے انگلینڈ اب تک اپنے شائقین کو کرکٹ کے ساتھ وابستہ رکھنے کی مسلسل کوشش کرتا رہا ہے۔

لیکن ایلسٹر کک کے خیال میں انگلینڈ کے پاس ایسے کھلاڑی موجود ہیں جو لوگوں میں دلچسپی بڑھا سکتے ہیں اور وہ 14-2013 میں پانچ صفر سے سیریز ہارنے کا بدلہ لینے کی کوشش کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’سب سے دلچسپ بات یہ ہے کہ ہمیں موقع ملا ہے۔ یہ سب سے بڑی سیریز ہے جو ایک کھلاڑی کی حیثیت سے آپ کھیلنا چاہتے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اس جیسی سنسنی خیز سیریز کھیل کے لیے بہت اچھی ہے

آسٹریلوں ٹیم کے کپتان مائیکل کلارک وہ واحد کھلاڑی ہیں جو سنہ 2005 میں کھیلی گئی ایشز سیریز میں آسٹریلوی سکواڈ کا حصہ تھے اور ان دلچسپ میچوں کو بہت خوشی سے یاد کرتے ہیں حالانکہ اس کے نتائج الگ تھے۔

مائیکل کلارک کا کہنا ہے کہ ’میں ویسی ہی کرکٹ دیکھنا چاہوں گا۔ میں انگلینڈ کی عوام کو اس سیریز کو بھر پور سپورٹ کرتے ہوئے اور آسٹریلیا میں لوگوں کو اپنے ٹی وی کے ساتھ چپکے ہوئے دیکھنا چاہتا ہوں۔ اس جیسی سنسنی خیز سیریز کھیل کے لیے بہت اچھی ہے۔‘

یہ پہلا موقع ہے جب کوئی آسٹریلوی انگلینڈ ٹیم کی کوچنگ کے فرائض سر انجام دے رہا ہے۔ حالیہ انگلش ٹیم کے کوچ ٹریور بیلس ہیں۔

ٹریور بیلس نے ایک ایسی ٹیم کی کوچنگ کی ذمہ داری سنبھالی ہے جس میں کرکٹ کے عالمی کپ کے بعد سے بڑی تبدیلیاں آئی ہیں اور اس نے ویسٹ انڈیز میں مایوس کن طریقے سے سیریز برابر کی تھی۔

اسی بارے میں