کارڈف ٹیسٹ: جو روٹ کی سنچری، انگلینڈ کی پوزیشن مستحکم

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption جو رووٹ نے وکٹ کی چاروں جانب سٹروکس کھیلتے ہوئے 166 گیندوں پر 134 رنز بنائے

کارڈف میں انگلینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے جانے والی ایشز ٹیسٹ سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے اپنی پہلی اننگز میں سات وکٹوں کے نقصان پر 343 رنز بنائے ہیں۔

انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا تو آغاز کچھ اچھا نہیں تھا۔ تاہم بعد میں جو رووٹ، گیری بیلنس اور بین سٹوکس کی شاندار بیٹنگ کی بدولت انگلینڈ کی پوزیشن مستحکم ہوگئی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پہلے دن کے کھیل کے اختتام پر معین علی 26 اور سٹوارٹ براڈ بغیر کوئی رن بنائے کریز پر موجود تھے۔

اس سے قبل کارڈف میں کھیلے جانے والے اس ٹیسٹ میچ میں صرف 43 رنز پر ہی انگلینڈ کے تین کھلاڑی آوٹ ہو کر پویلیئن لوٹ گئے تھے۔

کپتان ایلسٹر کک 20، ایڈم لیتھ چھ اور این بیل صرف ایک رنز بنا کر آوٹ ہوئے۔

جس کے بعد انگلینڈ کے جانب سے جو رووٹ اور گیری بیلینس نے چوتھی وکٹ کی شاندار شراکت میں 153 رنز بنا کر اپنی ٹیم کی پوزیشن بہتر کر دی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مچل سٹارک نے تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا

گیری بیلینس آٹھ چوکوں کی مدد سے 61 رنز بنا کر جاش ہیزل ووڈ کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔

پانچویں وکٹ کی شراکت میں رووٹ اور بین سٹوکس نے 84 رنز بنائے۔ جو رووٹ نے وکٹ کی چاروں جانب سٹروکس کھیلتے ہوئے 166 گیندوں پر 134 رنز بنائے۔ انھیں مچل سٹارک نے آوٹ کیا۔

بین سٹوکس بھی چھ چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 52 رنز بنا کر سٹارک کا شکار بنے۔

آسٹریلیا کی جانب سے مچل سٹارک اور جاش ہیزل ووڈ نے تین تین جبکہ نیتھن لائین نے ایک وکٹ حاصل کی۔

گذشتہ ایشز ٹیسٹ سیریز میں آسٹریلیا کی پانچ صفر سے کامیابی حاصل کرنے میں اہم کردار ادا کرنے والے فاسٹ بولر مچل جانسن کے حصے میں ایک بھی وکٹ نہیں آئی۔

اسی بارے میں