کرکٹ میں بدعنوانی، ممبئی کا کرکٹر معطل

تصویر کے کاپی رائٹ BCCI
Image caption بھارتی بورڈ کے بیان کے مطابق ہیکین شاہ نے آئی پی ایل کی ایک ٹیم میں کھیلنے والے اپنے ایک ساتھی کرکٹر کو کچھ پیش کش کی تھی

بھارتی کرکٹ کنٹرول بورڈ نے ممبئی کے ایک کھلاڑی کو بدعنوانی میں ملوث ہونے پر فوری طور پرمعطل کر دیا ہے۔

بی سی سی آئی کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گيا ہے کہ ممبئی کی جانب سے کھیلنے والے کرکٹ کھلاڑی ہیکین شاہ کو انسداد بدعنوانی کے اخلاقی ضابطوں کی خلاف ورزی کا مرتکب پائے جانے کے بعد فوری طور پر معطل کر دیا گیا ہے۔

بورڈ کے بیان کے مطابق کرکٹ کے حوالے سے ان کے تمام معاہدے بھی منسوخ کر دیے گئے ہیں۔

اس دوران بھارتی کرکٹ بورڈ کے صدر جگموہن ڈالمیا نے کہا ہے کہ بورڈ نے اس معاملے میں تیزی سے کارروائی کی ہے جو اس بات کا ثبوت ہے کہ کرکٹ میں بدعنوانی کو کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ابتدائی رپورٹ کی بنیاد پر مذکورہ کھلاڑی کو معطل کیا گیا ہے اور مزید کارروائی کے لیے معاملہ ضابطہ کیمٹی کے حوالے کر دیا گیا ہے تاکہ سخت اقدمات کیے جا سکیں۔

بھارتی بورڈ کے بیان کے مطابق ہیکین شاہ نے آئی پی ایل کی ایک ٹیم میں کھیلنے والے اپنے ایک ساتھی کرکٹر کو کچھ پیش کش کی تھی۔

اس کرکٹر نے اس پیش کش سے متعلق معلومات فوری طور پر اپنی ٹیم مینجمنٹ کو فراہم کر دی تھیں۔ بعد میں ٹیم کی انتظامیہ نے بی سی سی آئی کو معلومات فراہم کیں جس کے بعد صدر جگموہن ڈالمیا نے اس معاملے کی تفتیش کے لیے ایک ٹیم تشکیل دی تھی۔

اس تفتیش میں ہیکین شاہ کو قصوروار ٹھہرایا گیا اور ٹیم کی سفارش پر انھیں فوری طور معطل کر دیا گیا ہے۔

30 سالہ کرکٹر ہیکین شاہ ممبئی کی جانب سے کھیلتے ہیں۔ انھوں نے ممبئی کی جانب سے 37 فرسٹ کلاس ٹیسٹ میچوں میں چھ سنچریاں بنائی ہیں۔

ہیکین شاہ خود آئي پی ایل کا حصہ نہیں ہیں لیکن جس کھلاڑی سے انھوں نے بعض پیشکش کے ساتھ رابطہ کیا تھا ان کا تعلق آئی پی ایل کی ایک ٹیم سے ہے۔

اسی بارے میں