لارڈز ٹیسٹ میں انگلینڈ مشکلات کا شکار

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مچل جانسن نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا

لارڈز میں کھیلے جانے والے ایشز سیریز کے دوسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے اپنی پہلی اننگز میں آسٹریلیا کے 566 رنز کے جواب میں چار وکٹوں کے نقصان پر 85 رنز بنا لیے۔

انگلینڈ کو آسٹریلیا کی برتری ختم کرنے کے لیے مزید 481 رنز درکار ہیں اور پہلی اننگز میں اس کی چھ وکٹیں باقی ہیں۔

دوسرے دن کھیل کے اختتام پر ایلسٹر کک 21 اور بین سٹوکس 38 رنز بنا کر کریز پر موجود تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

میزبان ٹیم نے اپنی پہلی اننگز کا آغاز کیا تو صرف 30 رنز کے مجموعی سکور پر اس کی چار وکٹیں گر گئیں تھیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کرس راجرز اور سٹیون سمتھ نے دوسری وکٹ کی شراکت میں 284 رنز بنائے

آسٹریلیا کی جانب مچل جانسن نے دو جبکہ ہیزل وڈ اور مچل سٹارک نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

اس سے قبل آسٹیرلیا نے 566 رنز آٹھ کھلاڑی آؤٹ پر اپنی پہلی اننگز ڈیکلیئر کر دی تھی۔

جمعے کو آسٹریلیا نے 337 رنز ایک کھلاڑی آوٹ سے اپنی پہلی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا تو کرس راجرز 158 اور سٹیون سمتھ 129 رنز پر کھیل رہے تھے۔

دونوں بلے بازوں نے گذشتہ روز کے سکور میں 25 رنز کا اضافہ کیا۔ میچ کے دوسرے دن آسٹریلیا کے آوٹ ہونے والے پہلے کھلاڑی کرس راجرز تھے جو 28 چوکوں کی مدد سے 178 رنز بنا کر سٹوارٹ براڈ کی گیند پر کلین بولڈ ہوئے۔

سٹیون سمتھ اور کرس راجرز نے دوسرے وکٹ کی شراکت میں 284 رنز بنائے اور اپنی ٹیم کو ایک بڑا سکور کرنے کا موقع فراہم کیا۔

کپتان مائیکل کلارک ایک بڑی اننگز کھیلنے ناکام رہے اور صرف سات رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے۔

تاہم سٹیون سمتھ شاندار ڈبل سنچری بنانے میں کامیاب رہے۔ انھوں نے 346 گیندوں پر 25 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 215 رنز بنائے جبکہ آسٹریلیا کی جانب سے اپنا پہلا میچ کھیلنے والے وکٹ کیپر بیٹسمین پیٹر نیول 45 رنز بنا سکے۔

انگلینڈ کی جانب سے پہلی اننگز میں سٹورٹ براڈ نے چار، جو روٹ نے دو جبکہ مارک ووڈ اور معین علی نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

اسی بارے میں