ابتدائی نقصان کے بعد بھارتی بلے باز وکٹ پر جم گئے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption شیکھر دھون نے نصف سنچری بنا کر بھارت کی پوزیشن مضبوط کی ہے

سری لنکا کے شہر گال میں بھارت اور سری لنکا کے مابین کھیلے جانے والے پہلے کرکٹ ٹیسٹ میچ میں مہمان ٹیم کی پوزیشن مضبوط ہے۔

بدھ کو میچ کے پہلے دن میزبان ٹیم کو 183 رنز پر آؤٹ کرنے کے بعد بھارت نے کھیل کے اختتام پر دو وکٹوں کے نقصان پر 128 رنز بنا لیے تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

اس طرح بھارت کو سری لنکا کی پہلی اننگز کی برتری ختم کرنے کے لیے مزید 55 رنز درکار ہیں اور اس کی آٹھ وکٹیں باقی ہیں۔

جب کھیل رکا تو شیکھر دھون نصف سنچری مکمل کرنے کے بعد 53 جبکہ وراٹ کوہلی 45 رنز پر ناٹ آؤٹ تھے۔

سری لنکا کی طرح بھارت کا آغاز بھی اچھا نہ تھا اور اس کے دو بلے باز صرف 28 رنز پر پویلین لوٹ گئے تھے۔

تاہم اس موقع پر کوہلی اور دھون نے ذمہ دارانہ انداز میں بلے بازی کی اور 100 رنز کی شراکت قائم کی۔

اس سے قبل بھارت کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے سری لنکن ٹیم کھانے کے وقفے کے بعد 183 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

سری لنکن کپتان اینجلو میتھیوز کا پہلے بلے بازی کا فیصلہ اس وقت غلط ثابت ہوا جب ان کی نصف ٹیم کھانے کے وقفے سے پہلے 60 رنز پر آؤٹ ہو چکی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption بھارت کی جانب سے روی چندرن ایشون نے چھ وکٹیں لیں

تاہم اس موقع پر میتھیوز نے 64 اور چندی مل نے 59 رنز بنا کر ٹیم کو 183 کے مجموعے تک پہنچایا۔

بھارت کی جانب سے سپنر روی چندرن ایشون نے 46 رنز کے عوض چھ وکٹیں لیں۔

سری لنکا میں اپنی آخری سیریز کھیلنے والے تجربہ کار بلے باز کمارا سنگاکارا صرف پانچ رنز ہی بنا سکے۔

سنگاکارا نے اعلان کیا ہوا ہے کہ وہ اس سیریز میں دو ٹیسٹ میچ کھیلنے کے بعد ریٹائر ہوجائیں گے۔

اس میچ کے لیے سری لنکن ٹیم میں رنگنا ہیراتھ بھی واپس آئے ہیں اور تھرنگا کی غیرموجودگی میں تھیرامانے نے اپنی پوزیشن برقرار رکھی ہے۔

بھارت کی ٹیم اس سیریز میں تین ٹیسٹ میچ کھیلے گی اور بھارت کی کپتانی نوجوان کپتان وراٹ کوہلی کے ہاتھوں میں ہے۔

اسی بارے میں