ہاکی بحران: ظفر اللہ جمالی سیکرٹری شہباز احمد سے ناخوش

شہباز احمد تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption شہباز احمد کئی تقرریوں کو چیلنج کر دیا گیا ہے

پاکستان ہاکی فیڈریشن کی تشکیل کا معاملہ بحران کی شکل اختیار کرگیا ہے جس کے بعد نئے سیکریٹری شہباز احمد کا مستقبل خطرے سے دوچار دکھائی دیتا ہے۔

پاکستان ہاکی فیڈریشن کے نئے صدر بریگیڈئر ( ریٹائرڈ ) خالد سجاد کھوکھر نے شہباز احمد کے ساتھ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سابق صدر میرظفراللہ جمالی سے اہم ملاقات کی لیکن میرظفراللہ جمالی نے ان پر واضح کردیا کہ سیکریٹری سمیت جتنی بھی دیگر تقرریاں کی گئی ہیں وہ ان کے لیے قابل قبول نہیں کیونکہ جو کچھ بھی ہوا ہے وہ وزیراعظم کی واضح ہدایات کے قطعاً برخلاف ہے۔

یاد رہے کہ وزیراعظم نواز شریف نے جو پاکستان ہاکی فیڈریشن کے پیٹرن انچیف بھی ہیں نئے سیٹ اپ کی تشکیل کی ذمہ داری میرظفراللہ جمالی کو سونپی تھی اور بین الصوبائی رابطے کی وزارت کے سیکریٹری اعجاز چوہدری کو ہدایت کی تھی کہ قومی ہاکی سے متعلق تمام فیصلے میرظفراللہ جمالی کی مشاورت سے کیے جائیں گے۔

میرظفراللہ جمالی نے سیکریٹری اور دیگر عہدوں پر ہونے والی تقرریوں کے سلسلے میں انہیں نظرانداز کیے جانے پر وزیراعظم سے سخت ناراضی ظاہر کی تھی۔ وزیراعظم نے اس کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر خالد کھوکھر کو میرظفراللہ جمالی سے فوری طور پر ملنے کے لیے کہا تھا۔

میرظفراللہ جمالی نے بی بی سی کو بتایا کہ وہ اپنے موقف سے ہٹنے کے لیے تیار نہیں ہیں اور اگر یہ لوگ قومی ہاکی کو صحیح ڈگر پر لانے کے لیے سنجیدہ ہیں تو پھر انہیں درست فیصلے کرنے ہونگے۔

وزیراعظم کی ہدایت پر ان کے ملٹری سیکریٹری اور پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر خالد کھوکھر آئندہ چند روز میں اسلام آباد میں میرظفراللہ جمالی سے ملاقات کریں گے جس کے بعد قومی ہاکی سیٹ اپ میں چند اہم تبدیلیاں خارج ازامکان نہیں۔

غور طلب بات یہ ہے کہ وزیراعظم نے قومی ہاکی کی موجودہ مایوس کن صورتحال اور ورلڈ کپ کے بعد اولمپکس سے بھی پاکستانی ٹیم کے باہر ہونے کے اسباب جاننے کے لیے ایک کمیٹی قائم کی تھی جس نے قومی ہاکی ٹیم کی مایوس کن کارکردگی اور قومی ہاکی کے معاملات درست طریقے سے نہ چلانے کا ذمہ دار پاکستان ہاکی فیڈریشن کو قرار دیا تھا۔

جس کے بعد اختررسول سے استعفی لے کر خالد کھوکھر کو پاکستان ہاکی فیڈریشن کا نیا صدر مقرر کردیاگیا۔ خالد کھوکھر وفاقی وزیر احسن اقبال کے سمدھی ہیں۔

اسی بارے میں