لارڈز: ’آبسٹرکٹنگ دا فیلڈ‘ پر سٹوکس کے آؤٹ ہونے پر تناز‏ع

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بین سٹوکس کے آؤٹ ہونے پر کرکٹ ماہرین اور شائقین میں اتفاق نہیں

لارڈز میں سنیچر کو آسٹریلیا کے خلاف دوسرے ون ڈے مقابلے میں انگلینڈ کے بلے باز بین سٹوکس کو ’آبسٹرکٹنگ دا فیلڈ‘ کی وجہ سے آؤٹ دے دیا گیا۔

ان کا آؤٹ ہونا سوشل میڈیا پر موضوع بحث بنا ہوا ہے۔

آسٹریلیا نے اس میچ میں انگلینڈ کو 64 رنز سے شکست دی اور پانچ میچوں کی سیریز میں صفر کے مقابلے دو میچ کی برتری حاصل کر لی ہے۔

یہ واقعہ انگلینڈ کی اننگز کے 26 ویں اوور میں پیش آیا جب بین سٹوکس کریز پر تھے اور بولنگ مچل سٹارک کر رہے تھے۔

’ہینڈل دی بال‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سٹوکس اس فیصلے سے ناراض نظر آئے

اس اوور کی چوتھی گیند پر سٹوکس نے شاٹ لگائی اور اس دوران کریز سے کچھ باہر نکل آئے۔ سٹارک نے سٹمپس کا نشانہ لگاتے ہوئے گیند سٹوکس کی جانب پھینکی۔

گیند سے بچنے کی کوشش میں سٹوکس نے بظاہر بائیں دستانے سے گیند کو روک دیا۔ اسی درمیان آسٹریلوی وکٹ کیپر میتھیو ویڈ نے آؤٹ کی اپیل کردی۔

میدان پر موجود امپائر کمار دھرم سینا اور ٹم رابنسن نے معاملہ تیسرے امپائر جوئل ولسن کو ریفر کر دیا جنھوں نے سٹوکس کو ’فیلڈنگ میں رکاوٹ ڈالنے‘ کے تحت ان کو آؤٹ دے دیا۔

سٹوکس ون ڈے کرکٹ میں اس طرح آؤٹ ہونے والے چٹھے کھلاڑی ہیں جبکہ ٹیسٹ میچ میں صرف لین ہٹن کو اس طرح آؤٹ دیا گیا ہے۔

پاکستان کے چار کھلاڑی رمیز راجہ، انضمام الحق، محمد حفیظ اور انور علی اس طرح آؤٹ ہوئے ہیں جبکہ بھارت کے مہندر امرناتھ دو مرتبہ اور جنوبی افریقہ کے کولینن بھی اس میں شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption مورگن کے خیال میں سٹوکس کا عمل فطری تھا

سٹوکس کے آؤٹ ہونے کے فیصلے پر بیانات کا سلسلہ چل نکلا۔ انگلینڈ ٹیم کے کپتان ایئن مورگن نے کہا: ’مجھے نہیں لگتا بین نے ایسا جان بوجھ کر کیا۔ لیکن تھرڈ امپائر کو ایسا لگا۔‘

کرکٹ کمنٹیٹر ہرش بھوگلے نے ٹویٹ کیا: ’جتنی بار آپ سٹوکس کے آؤٹ ہونے کا ویڈیو دیکھیں گے اتنا ہی زیادہ وہ آؤٹ نظر آئےگا۔ نیت کو جانچنے کا کوئی طریقہ نہیں ہے۔ آپ کو کھلاڑی کے ایکشن اور حرکت سے طے کرنا ہوتا ہے۔‘

سابق کرکٹر ایان باتھم اور مائیکل ہولڈنگ کا کہنا تھا کہ ’مچل سٹارک کو اپیل نہیں کرنی چاہیے تھی۔ آسٹریلوی کپتان سمتھ کو سٹوکس کو واپس بلا لینا چاہیے تھا۔‘

نیوزی لینڈ کے سابق کرکٹر سکاٹ سٹیرس نے کہا: ’سٹوکس کے آؤٹ ہونے پر اس طرح کا تنازع کیوں؟ وہ صاف آؤٹ ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption آسٹریلیا کے کپتان سمتھ کا خیال ہے کہ وکٹ کیپر ویڈ اس بارے میں زیادہ اچھی پوزیشن میں تھے

آسٹریلیا کے سابق کرکٹر ڈین جونز نے ٹویٹ کیا: ’میرے خیال سے امپائر کا فیصلہ درست تھا۔‘

انگلینڈ کے سابق کپتان مائیکل وان نے ٹویٹ کیا: ’ری پلے کو پوری رفتار سے دکھایا جانا چاہیے تھا۔ سٹوکس کے پاس اس تھرو سے بچنے کا ٹائم ہی نہیں تھا۔‘

اسی بارے میں