فٹبال کلب معذور مداحوں کو سہولیات فراہم کرنے پر متفق

تصویر کے کاپی رائٹ Bongarts
Image caption جون میں انسانی حقوق کی تنظیم کو موصول ہونے والی شکایات کے بعد پریمئیر لیگ کے بڑے کلبوں کے خلاف قانونی کارروائی کرنے کا کہا گیا تھا

انگلینڈ میں فٹبال کی پریمئیر لیگ کے تمام کلب اگست 2017 تک معذور تماشائیوں کی فٹبال سٹیڈیموں تک رسائی کے عمل میں بہتری لانے پر متفق ہوگئے ہیں۔

بی بی سی کی گذشتہ سال کی تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ انگلینڈ کے بڑے کلبوں میں سے 17 کلب ویل چیئرز کے لیے جگہ فراہم کرنے میں ناکام رہے ہیں۔

اس وقت کل 20 کلبوں میں سے 15 کلبوں کو اصول کے مطابق سٹیڈیموں میں وسعت دینے کی ضرورت ہے۔

پیر کے روز حکومت کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں پریمیئر لیگ گراؤنڈز میں معذور مداحوں کے لیے ناکافی سہولیات پر تنقید کی گئی ہے۔

معذور افراد کے وزیر جسٹن ٹاملنسن کا کہنا ہے کہ بعض مسائل کو صرف ’سوچ ہی سے بدلا جا سکتا ہے‘ جبکہ دوسرے پہلوں پر ’کام کرنے کی ضرورت ہے۔‘

بی بی سی سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’یہ بہت شرمناک بات ہے۔ بعض میدانوں میں تو باقاعدہ درجہ بندی نہیں ہے۔ تماشائی پھیل جاتے ہیں یا پھر انھیں باہر سے آنے والے مداحوں کے ساتھ بیٹھا دیا جاتا ہے۔ میرے لیے یہ بات بالکل ناقابل قبول ہے۔‘

انھوں نے کہا کہ فٹبال کی تنظیموں کے ساتھ بات کرنے کا یہ آخری موقع ہے اور انھیں بتانا ہے کہ ’وہ اپنے تمام کاموں کو ترتیب دے دیں، انھیں یہ مسئلہ حل کرنا ہے۔‘

پریمیئر لیگ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’معذور افراد کی رسائی کے لیے بہتری لانے کے مقصد سے ہم پریمیئر لیگ کے ہر سٹیڈیم کا دورہ کر کے اس صورتِ حال کا خود جائزہ لے رہے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ RIA Novosti
Image caption معذور افراد کے وزیر جسٹن ٹاملنسن کا کہنا ہے کہ بہت سے مسائل تو سوچ سے ہی حل کیے جا سکتے ہیں

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ’گذشتہ ہفتے پریمئیر لیگ کے شراکت داروں کی ملاقات میں معذور افراد کی رسائی کے معاملے پر بات ہوئی ہے اور بہت سی نئی تجاویز پر اتفاق بھی ہوا ہے۔‘

ان تجاویز میں شامل چند درج ذیل ہیں۔

معلومات:

کلبوں کو تمام معذور افراد کو سہولیات فراہم کرنا ہوں گی۔ انھیں مقامی پارکنگ سے سٹیڈیم تک کا فاصلہ کتنا ہے اور معذور افراد کے چلنے کے لیے راستہ کس طرف ہے، جیسی معلومات فراہم کرنا ہوں گی۔

ٹکٹ:

کلبوں کو اس بات کو یقینی بنانا ہو گا کہ معذور تماشائی آن لائن ٹکٹ خرید سکیں۔ معذور افراد کو ویل چئیر نشستیں فراہم کرنا اور ان کے خاندان والوں اور دوستوں کے ساتھ بیٹھنے کو بھی یقینی بنانا ہو گا۔

سٹیڈیم آمد و رفت:

کلبوں کی ذمہ داری ہوگی کہ وہ معذور افراد کو ٹرانسپورٹ کی اس وقت کی درست معلومات فراہم کریں۔

مجموعی تجربہ:

میچ کے دن موجود اور دیگر تمام سٹیورڈز کو معذور افراد کے حوالے سے آگاہی کی تربیت دینا ضروری ہے۔ معذور افراد کے ساتھ کسی بھی قسم کے غیر مہذب رویے کو برداشت نہ کیا جائے۔

امداد اور موافقت:

کلبوں کو ویل چئیر استعمال کرنے والے افراد کے لیے سٹیڈیم میں جگہ بڑھانی ہو گی۔

اگست میں پریمئیر لیگ کے شروع ہونے والے نئے سیزن سے قبل چیریٹی ریوائٹالائز کے تحت ہونے والے ایک سروے سے پتہ چلا ہے کہ بہت سے کلب اب بھی معذور افراد کو سہولیات فراہم کرنے میں مسلسل ناکام رہے ہیں۔

اسی بارے میں