میسی پر سپین میں ٹیکس فراڈ کا مقدمہ چلے گا

لائنل میسی تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption میسی کا شمار دنیا کے امیر ترین فٹبالرز میں ہوتا ہے

ہسپانوی کلب بارسلونا کے لیے فٹبال کھیلنے والے ارجنٹائن کے عالمی شہرت یافتہ فٹبالر لائنل میسی پر ٹیکس کی ادائیگی میں دھوکہ دہی کے تین الزامات کے تحت مقدمہ چلایا جائے گا۔

مقدمے کے آغاز کے لیے کوئی تاریخ مقرر نہیں کی گئی ہے تاہم الزام ثابت ہونے پر انھیں دو برس قید تک کی سزا ہو سکتی ہے۔

نیمار کے خلاف فراڈ کا مقدمہ

میسی اور ان کے والد پر مقدمہ چلانے کا حکم ایک ہسپانوی عدالت نے جمعرات کو دیا۔

جج نے اس سفارش کو مسترد کر دیا کہ میسی کے خلاف مقدمہ نہ چلایا جائے کیونکہ ان کے والد ہی ان کے مالی معاملات کے ذمہ دار ہیں۔

میسی اور ان کے والد جارج پر الزام ہے کہ انھوں نے ہسپانوی حکام کو ٹیکس کی مد میں 50 لاکھ امریکی ڈالر کے مساوی رقم ادا نہیں کی ہے تاہم وہ دونوں ان الزامات سے انکار کرتے ہیں۔

ٹیکس جمع کرنے والے محکمے کے وکلا نے عدالت سے دونوں ملزمان کو 22 ماہ قید کی سزا دینے کی درخواست کی ہے۔

استغاثہ کا کہنا ہے کہ جارج نے سنہ 2007 سے 2009 کے دوران اپنے بیٹے کی آمدن پر ٹیکس کی ادائیگی سے بچنے کے لیے بیلیز اور یوروگوئے میں رجسٹرڈ کمپنیوں کو استعمال کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ایک ہسپانوی عدالت نے بارسلونا کلب اور اس کے برازیلی فٹبالر نیمار کے خلاف بھی فراڈ کا مقدمہ چلانے کی اجازت دی ہے

28 سالہ میسی کے وکلا نے اپنے دلائل میں کہا کہ ان کے موکل نے’زندگی میں کبھی اپنے معاہدوں کو نہ تو پڑھا اور نہ ہی ان کا جائزہ لیا۔‘

تاہم جج نے کہا ہے کہ ’اس بات کے آثار ہیں کہ جرم دونوں ملزمان نے کیا ہے۔‘

رواں برس جون میں بارسلونا کی ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا تھا کہ میسی کو اس لیے مقدمے سے استثنیٰ نہیں دیا جا سکتا کہ وہ اپنے مالیاتی معاملات کے بارے میں کچھ نہیں جانتے تھے۔

میسی چار مرتبہ فیفا کے سال کے بہترین عالمی کھلاڑی رہ چکے ہیں اور ان کا شمار دنیا کے امیر ترین فٹبالرز میں ہوتا ہے۔

اگست 2013 میں میسی اور ان کے والد نے پچاس لاکھ یورو کی رقم ٹیکس کی عدم ادائیگی اور سود کی مد میں واپس کر چکے ہیں۔

خیال رہے کہ میسی سے قبل رواں برس کے وسط میں ایک ہسپانوی عدالت نے بارسلونا کلب اور اس کے برازیلی فٹبالر نیمار کے خلاف بھی فراڈ کا مقدمہ چلانے کی اجازت دی ہے۔

اسی بارے میں