ہم نے خود انگلینڈ کو خطرہ بننے دیا: وقاریونس

وقار یونس تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption وقار یونس کہتے ہیں کہ ابوظہبی کی پچ سے بھی انھیں مایوسی ہوئی ہے

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کوچ وقاریونس کا کہنا ہے کہ ابوظہبی ٹیسٹ بڑے آرام سے ڈرا ہوسکتا تھا لیکن دوسری اننگز میں پاکستانی بیٹسمینوں کی مایوس کن کارکردگی نے انگلینڈ کو خطرہ بننے دیا۔

وقاریونس نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی بیٹسمینوں نے دوسری اننگز میں جس طرح کی بیٹنگ کی وہ ان کے لیے کسی طور قابل قبول نہیں ہے۔یہ میچ بڑے اطمینان سے ڈرا ہوجاتا لیکن ایک وقت ایسا آیا کہ انگلینڈ کی ٹیم خطرہ بنتے ہوئے جیتنے کی پوزیشن میں آگئی۔

وقاریونس نے کہا کہ اگر ہمیں یہ سیریز جیتنی ہے تو ہمیں بہت کام کرنا ہوگا ۔پاکستانی بیٹنگ بہت تجربہ کار ہے لیکن آخری سیشن میں وہ جس طرح آؤٹ ہوئی ہمیں اس پرغور کرنا ہوگا۔یہ کھیل ہر سیشن میں اچھا کھیل پیش کرنے کا ہےاور اگر کسی ایک سیشن میں بھی آپ اچھا نہیں کھیلتے تو حریف ٹیم آپ کو نہیں چھوڑتی جیسا کہ انگلینڈ نے کیا۔

وقاریونس نے کہا بیٹسمینوں کو سخت دباؤ میں بیٹنگ کرنی ہوگی۔انہیں یقین ہے کہ اگلے میچوں میں صورتحال مختلف ہوگی۔

وقاریونس نے کہا کہ یاسر شاہ کی ٹیم میں واپسی پاکستان کے نقطہ نظر سے اہم ہے لیکن انگلینڈ کی ٹیم کو بھی پہلے ٹیسٹ سے حوصلہ ملا ہے۔

وقاریونس نے کہا کہ ابوظہبی کی پچ سے انہیں مایوسی ضرور ہوئی ہے لیکن وہ اس پر تنقید کرنا نہیں چاہتے کیونکہ دونوں ٹیموں نے کیچز ڈراپ کیے۔اگر یہ کیچز لے لیے جاتے تو یہ ایک مختلف میچ ہوسکتا تھا۔ماضی میں یہ وکٹ ہمیشہ ہمارے لیے مددگار رہی ہے اور اس پر نتیجے برآمد ہوئے ہیں لیکن اس بار یہ بہت سلو تھی۔

اسی بارے میں