شیوسینا کی دھمکیوں کے بعد علیم ڈار سیریز سے الگ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption آئی سی سی کے ترجمان کے مطابق موجودہ صورت حال کے پیش نظر، علیم ڈار سے یہ توقع کرنا غلط ہو گا کہ وہ اپنے فرائض اچھی طرح سے نبھا پائیں گے

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے پاکستان سے تعلق رکھنے والے امپائر علیم ڈار کو جنوبی افریقہ اور بھارت کے درمیان جاری کرکٹ سیریز کے بقیہ میچوں میں امپائرنگ کے فرائص انجام دینے سے روک دیا ہے۔

آئی سی سی کے امپائروں کے ’ایلیٹ پینل‘ کے رکن علیم ڈار سیریز کے پہلے تین ایک روزہ کرکٹ میچوں میں امپائرنگ کے فرائض سر انجام دے چکے ہیں اور انھیں چنئی اور ممبئی میں ہونے والے چوتھے اور پانچویں میچوں میں بھی امپائرنگ کرنا تھی۔

بی سی سی آئی ہیڈکوارٹر پر شیو سینا کا دھاوا

کیا اب شیو سینا امپائروں کے بارے میں فیصلے کرے گی؟

’کرکٹ اور مسلمان اب محفوظ نہیں رہے‘

کرکٹ کی عالمی تنظیم نے پیر کو ایک بیان میں کہا ہے کہ علیم ڈار کو بقیہ میچوں سے دستبردار کروانے کا فیصلہ ممبئی میں انتہاپسندوں کی جانب سے انڈین کرکٹ کنٹرول بورڈ کے دفاتر پر حملے کے بعد کیا ہے۔

بیان کے مطابق ان مظاہرین نے دھمکی دی تھی کہ وہ پاکستانی امپائر کو اتوار کو ممبئی میں ہونے والے پانچویں ایک روزہ کرکٹ میچ میں امپائرنگ نہیں کرنے دیں گے۔

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

علیم ڈار کو ہٹانے کے فیصلے پر آئی سی سی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ’موجودہ صورت حال کے پیش نظر، علیم ڈار سے یہ توقع کرنا غلط ہو گا کہ وہ اپنے فرائض اچھی طرح سے نبھا پائیں گے۔‘

کونسل کے مطابق ان کی جگہ اب کسی دوسرے امپائر کا انتخاب کیا جائے گا اور آئندہ چند دنوں میں اس کا اعلان کر دیا جائے گا۔‘

خیال رہے کہ پیر کی صبح بھارت کی ہندو نواز جماعت شیو سینا کے حامیوں نے پاکستان کے ساتھ کرکٹ کے روابط بحال کرنے کے لیے بات چیت کرنے پر بھارتی کرکٹ بورڈ کے دفتر پر حملہ کر دیا تھا۔

اس حملے کی وجہ سے پاکستانی کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہریار خان اور بی سی سی آئی کے صدر کے درمیان ملاقات بھی نہیں ہو سکی تھی۔

اسی بارے میں