پسٹوریئس جیل سے رہا، پانچ سال کے لیے مکان میں نظر بند

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ویلنٹائن ڈے کے موقعے پر پسٹوریئس نے 29 سالہ ریوا سٹین کیمپ کو گولیاں مار کر قتل کر دیا تھا

جنوبی افریقہ کے جیل حکام کا کہنا ہے کہ ایتھلیٹ آسکر پسٹوریئس کو ایک سال بعد جیل سے رہا کر دیا گیا ہے اور اب وہ اپنی سزا کے پانچ سال اپنے چچا کے مکان میں نظربند رہیں گے۔

خیال رہے کہ سنہ 2013 میں پسٹوریئس نے اپنی گرل فرینڈ ریوا سٹین کیمپ اس وقت گولی ماری جب وہ باتھ روم میں تھیں۔ پسٹوریئس کا موقف ہے کہ ان کی دانست میں باتھ روم میں کوئی چور تھا۔

بعد ازاں عدالت کی جانب سے انھیں قتلِ خطا کا مجرم قرار دیا گیا تھا۔

ریوا سٹین کے اہلِ خانہ کے خیال میں پسٹوریئس کے ساتھ نرمی برتی گئی ہے۔

پسٹوریئس کو پیر کی شام کو جیل سے رہا کیا گیا۔

استغاثہ کی جانب سے ان کےمقدمے کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں دائر کی جانے والی اپیل کی سماعت تین نومبر کو ہوگی۔

جیل ترجمان کے مطابق انھیں ایک روز قبل رہا کیا گیا ہے۔

پریٹوریا میں بی بی سی کی نامہ نگار کیرن ایلن کا کہنا ہے کہ پسٹوریئس کو رات کے وقت ان کے چچا کے گھر منتقل کیا گیا جو جیل سے 20 منٹ دور ہے۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ ان کی قبل ازوقت رہائی میڈیا سے بچنے کے لیے کی گئی۔

اسی بارے میں