پاکستانی بلائنڈ کرکٹ ٹیم کا دورۂ بھارت سے انکار

پاکستان بلائنڈ کرکٹ ٹیم
Image caption پاکستان بلائنڈ کرکٹ ٹیم ماضی میں بھارت کا دورہ کرتی رہی ہے

پاکستان بلائنڈ کرکٹ کونسل نے بھارت میں ہونے والے ایشیا بلائنڈ کرکٹ ٹورنامنٹ میں شرکت سے انکار کر دیا ہے۔

ٹورنامنٹ 17 سے 24 جنوری تک بھارت کے شہر کوچی میں ہو رہا ہے۔ جس میں پانچ ٹیمیں حصہ لے رہی تھیں۔

پاکستان بلائنڈ کرکٹ کونسل کے چئیرمین سید سلطان شاہ نے بی بی سی کو بتایا کہ یہ فیصلہ بھارت میں ہونے والے انتہا پسندی کے حالیہ واقعات کے باعث کیا گیا ہے۔

سید سلطان شاہ کا کہنا تھا کہ ’شیوسینا اور کئی اور انتہا پسند گروہ اس وقت بھارت میں سرگرم ہیں، علیم ڈار واپس آگئے اور شہر یار خان کی میٹنگ نہیں ہونے دی گئی۔ اتنے سارے واقعات کے بعد اپنی بلائنڈ ٹیم کے حفاظت کے حوالے سے ہمارے ذہن میں بہت سے خدشات پیدا ہو گئے ہیں۔ اور ہم کوئی رسک نہیں لے سکتے۔‘

سید سلطان شاہ کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے بلائنڈ کرکٹ کونسلز کے درمیان اچھے روابط ہیں اور گذشتہ برس بھارت کی ٹیم پاکستان میں میچ کھیل چکی ہے۔ انھیں دورے کے دوران عوام کی جانب سے بہت محبت اور حکومت کی جانب سے بہترین سکیورٹی دی گئی تھی۔

پاکستان بلائنڈ کرکٹ کونسل کے چئیرمین کا کہنا ہے کہ جب تک مودی سرکار اس معاملے میں خاموش ہے اور وہ انتہاپسندی کو روکنے کی کوشش نہیں کرے گی پاکستان کی ٹیم بھارت کا دورہ نہیں کرے گی۔

’ہم تو سپورٹس کے لوگ ہیں جو محبت اور امن پر یقین رکھتے ہیں۔ انتہا پسندی اور نفرت ہمارے لیے قابل قبول نہیں۔ بھارت کی ٹیم جب یہاں آئی تھی تو ہم نے ان کا بہت خیال رکھا تھا۔ ہم خود بھی ماضی میں بھارت جاتے رہے ہیں لیکن موجودہ حالات میں یہ قطعاً ممکن نہیں کہ ہم بھارت کے ساتھ کسی میچ میں حصہ لے سکیں۔‘

اسی بارے میں