سیریز کو دو صفر پر ختم کرنا چاہتے ہیں: وقار یونس

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption وقاریونس کا کہنا ہے کہ پاکستانی ٹیم کو دبئی ٹیسٹ کی جیت کا کریڈٹ ملنا چاہیے خاص کر بولرز نے بہت محنت کی

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کوچ وقار یونس جیت سے قطع نظر دبئی ٹیسٹ کے آخری دن کے کھیل کو ایک اہم دن قرار دیتے ہیں جس میں بقول ان کے کرکٹ کی جیت ہوئی۔

یاد رہے کہ پاکستان نے دبئی ٹیسٹ کے آخری دن انگلینڈ کی سخت مزاحمت کو قابو کرتے ہوئے 178 رنز سے کامیابی حاصل کی۔

’تیسرے دن ہی میچ ہار گئے تھے‘

سپنرز نے پاکستان کو دبئی ٹیسٹ جتوا دیا

دونوں ٹیموں کے درمیان کھیلا گیا پہلا ٹیسٹ میچ بھی آخری دن دلچسپ مرحلے میں داخل ہوگیا تھا جس میں انگلینڈ کی ٹیم کم روشنی کی وجہ سے 19 اوورز میں 99 رنز کے ہدف کو حاصل کرنے سے صرف 25 رنز دور رہ گئی تھی۔

وقاریونس کا کہنا ہے کہ پاکستانی ٹیم کو دبئی ٹیسٹ کی جیت کا کریڈٹ ملنا چاہیے۔ ’خاص کر بولرز نے بہت محنت کی اور خوشی کی بات یہ ہے کہ پاکستانی ٹیم کوسیریز میں برتری حاصل ہوگئی ہے۔‘

وقاریونس نے کہا کہ سیریز میں برتری حاصل کرنا ہمیشہ اہم ہوتا ہے اور انھیں یقین ہے کہ ٹیم اسی مورال کے ساتھ شارجہ ٹیسٹ کھیلے گی اور پوری کوشش کی جائے گی کہ سیریز کو دو صفر پر ختم کیا جائے۔

وقاریونس نے کہا کہ دبئی ٹیسٹ جیت لینے کا مطلب یہ نہیں کہ ہم ریلکس ہوجائیں کیونکہ انگلینڈ کی ٹیم نے آخری دن جس طرح فائٹ کی ہے اس سے اس بات کا بخوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ وہ ہر کنڈیشنز میں مقابلہ کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے لہذا پاکستان ٹیم کو اس بات کا بہت خیال رکھنا ہوگا۔

وقاریونس نے شارجہ کی وکٹ کے بارے میں کہا کہ ’شارجہ کی وکٹ ماضی میں بیٹنگ کے لیے سازگار رہی ہے لیکن سننے میں آیا ہے کہ اس وکٹ کی مٹی تبدیل کی گئی ہے اور اسے بہتر کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ پاکستانی ٹیم اپنی سپن اور ریورس سوئنگ کی قوت لے کر میدان میں اترے گی۔

اسی بارے میں