برزبین ٹیسٹ: آسٹریلیا کے دونوں اوپنرز کی سنچریاں

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption آسٹریلیا کی جانب سے دونوں اوپنرز جو برنز اور ڈیوڈ وارنر نے سنچریاں بنائیں

آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے درمیان برزبین میں جاری پہلے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کھیل کے اختتام پر آسٹریلیا نے چار وکٹوں کے نقصان پر 264 رنز بنا لیے تھے اور اس کی مجموعی برتری 503 رنز ہو چکی ہے۔

تیسرے دن لنچ کے بعد نیوزی لینڈ کی پوری ٹیم 317 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی اور آسٹریلیا نے پہلی اننگز میں 239 رنز کی اہم سبقت حاصل کی تاہم اس نے فالو آن نہیں دینے کا فیصلہ کیا۔

آسٹریلیا کی جانب سے دونوں اوپنرز جو برنز (129) اور ڈیوڈ وارنر (114) نے سنچریاں بنائیں۔ اس سے قبل پہلی اننگز میں بھی وارنر سنچری بنا چکے ہیں۔ کھیل کے اختتام پر عثمان خواجہ نو اور ایڈم ووگز ایک رن پر کھیل رہے تھے۔ نیوزی لینڈ کی جانب سے مارک کريگ نے تین وکٹیں لیں جبکہ ایک وکٹ بولٹ کے حصے میں آئی۔

تازہ سکور جاننے کے لیے کلک کریں

چائے کے وقفے پر آسٹریلیا نے بغیر کسی نقصان کے 86 رنز بنا لیے تھے۔ ڈیوڈ وارنر 46 اور جو برنز 36 رنز پر کھیل رہے تھے جبکہ آسٹریلیا کی مجموعی برتری 315 رنز ہو گئی تھی۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے کین ولیمسن کا آخری وکٹ گرا اور انھوں نے 140 رنز کی عمدہ اننگز کھیلی۔ ایک وقت نیوزی لینڈ کی پانچ وکٹیں محض 118 رنز پر گر گئی تھی۔ دوسرے نمایاں سکورر لیتھم رہے جنھوں نے 47 رنز بنائے۔ راس ٹیلر صفر پر جبکہ کپتان برینڈم میکلم چھ رنز بناکر جانسن کا شکار ہو گئے۔

آسٹریلیا کی جانب سے میچل سٹارک نے چا اور میچل جانسن نے تین وکٹیں لیں جبکہ ایک ایک وکٹ ہیزل وڈ، ناتھن لیئن اور میچل مارش کے حصے میں آئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption آسٹریلیا کے بلے باز عثمان خواجہ نے پہلی اننگز میں اپنے کریئر کی پہلی سنچری بنائی

اس سے قبل میزبان ٹیم آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تھا اور اوپنر ڈیوڈ وارنر اور عثمان خواجہ کی سنچریوں کی بدولت چار وکٹ پر 556 رنز بناکر اننگز کے خاتمے کا اعلان کیا۔

ڈیوڈ وارنر نے 19 چوکے اور ایک چھکے کی مدد سے 163 رنز بنائے جبکہ عثمان خواجہ نے 16 چوکے اور دو چھکوں کی مدد سے 174 رنز بنائے۔ اوپنر برنز نے 71 رنز بنائے جبکہ کپتان سمتھ نے اور ایڈم ووگز نے بالترتیب 48 اور 71 رنز بنائے۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے ٹم ساؤدی، ٹرینٹ بولٹ، نیشم اور ویلمسن نے ایک ایک وکٹ لیں۔

اس سیریز میں تین ٹیسٹ میچ ہوں گے۔

اسی بارے میں