سیکس ٹیپ تنازعے میں کریم بینزیما کا کریئر خطرے میں

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کریم بیزیما نے پچھلے ماہ آرمینیا اور ڈنمارک کے خلاف میچوں سے قبل اپنے ساتھی فٹبالر سے سیکس ٹیپ کے حوالے سے بات کی تھی: ذرائع

فرانسیسی فٹبال ٹیم کے رکن اور ہسپانوی فٹبال کلب ریال میڈرڈ کے لیے کھیلنے والے سٹرائیکر کریم بینزیما کو ایک فرانسیسی کھلاڑی کو بلیک میل کرنے کے مقدمے میں باضابطہ طور پر تحقیقات میں شامل کر لیا گیا ہے۔

کیا فرانسیسی فٹ بالر کریم بینزیما سنہ 2016 میں منعقد ہونے والے یورو کپ میں حصہ لے پائیں گے؟ کیا قومی ٹیم میں ان کی شمولیت اب اپنے آخری مرحلے میں ہے؟

بلیک میلنگ کا مقدمہ، بینزیما کو تحقیقات میں شامل ہونے کا حکم

فیفا کے معطل صدر ہسپتال میں داخل

فرانس کے زیادہ تر فٹ بال پر نظر رکھنے والوں کا کہنا ہے کہ ان کا کریئر ختم ہو چکا ہے۔

جس مقدمے میں کریم بینزیما سے پوچھ گچھ ہو رہی ہے وہ ایک فرانسیسی فٹبالر میتھیو ویلبینا کو مبینہ طور پر سکیس ٹیپ کی بنا پر بلیک میل کرنے کی کوششوں سے متعلق ہے۔

ریال میڈرڈ کے لیے کھیلنے والے سٹرائیکر نے اپنے خلاف شکوک و شبہات کے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ انھوں نے میتھیو ویلبینا کو ایک مشکل صورت حال سے نمٹنے کے لیے صرف ایک مشورہ دیا تھا۔

لیکن تفتیش کاروں کا کہنا ہے کہ بات اتنی آسان نہیں ہے اور کریم بینزیما پر ’بلیک میل کرنے کی کوشش کی سازش میں ملوث ہونے‘ کا ممکنہ الزام عائد کیا جا سکتا ہے۔

بینزیما کے لیے زیادہ نقصان دہ بات یہ ہے کہ میڈیا میں فون پر ہونے والی بات چیت بھی افشا کی گئی ہے جو ان کے دیے گئے بیان پر سوالات اٹھاتی ہیں۔

اس معاملے نے فرانسیسی فٹ بال کو ایک بار پھر تنازعے کا شکار کر دیا ہے جیسے 2010 میں جنوبی افریقہ میں ٹیم تنازعے میں پھنس گھِر گئی تھی۔

2010 میں جنوبی افریقہ کے ورلڈ کپ کے دوران فرانسیسی ٹیم نے تربیت کے دوران ہڑتال کی تھی جس کے بعد ان کو بری طرح شکست ہوئی اور وہ ملک واپس آئی۔

اس تازہ تنامعے کے بعد ایک بار پھر لوگوں نے کھلاڑیوں پر غم و غصے کا اظہار کیا ہے۔

کہانی اس سال کے ابتدا میں شروع ہوئی تھی جب فرانس کے مڈ فیلڈر میتھیو ویلبینا کو معلوم پڑا کہ ایک خاتون کے ساتھ ان کی بنائی گئی سیکس ویڈیو چوری ہو گئی ہے۔

اس چوری کا مبینہ ذمہ دار ایکسل اینگاٹ کو ٹھہرایا گیا تھا جو فرانسیسی میڈیا کے مطابق امیر ترین فٹ بالروں کے مسائل حل کرتے ہیں۔

ایکسل پر الزام عائد ہے کہ انھوں نے مصطفیٰ زی اور یونس ایچھ نامی دو افراد کی مدد سے مبینہ طور پر ویلبینا کو اس ویڈیو کے بارے میں بلیک میل کیا اور ان سے نامعلوم فائدے اٹھانے کی کوشش کی جنھیں واضح نہیں کیا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption جس مقدمے میں کریم بینزیما سے پوچھ گچھ ہو رہی ہے وہ ایک فرانسیسی فٹبالر میتھیو ویلبینا کو مبینہ طور پر سکیس ٹیپ کی بنا پر بلیک میل کرنے کی کوششوں سے متعلق ہے

تاہم ویلبینا نے ان کے ساتھ تعاون کرنے سے انکار کر کے پولیس کو اطلاع کی جس نے پھر تینوں مشتبہ افراد کے فون ٹیپ کرنا شروع کر دیے۔

کہا جاتا ہے کہ اس مرحلے پر تینوں نے ایک اور راستہ اپنایا۔ انھوں نے کریم بینزیما کے پرانے دوست کریم زیناتی سے رابطہ کیا گیا جنھیں ماضی میں مسلح چوری اور منشیات فروشی کے جرائم میں سزا دی گئی ہے۔

زیناتی ریال میڈرڈ کے سٹار سے اپنی دوستی کا فائدہ اٹھانے پر مان گئے اور انھوں نے بینزیما کو تینوں مشتبہ افراد کا پیغام ویلبینا تک پہنچانے کی ذمہ داری سونپ دی۔

اس طرح پانچ اکتوبر کو تربیت کے دوران دونوں فٹ بالروں کے درمیان ایک گفتگو ہوئی جو اس کیس کے لیے بہت اہم قرار دی جاتی ہے۔

اس سب کو مد نظر رکھ کر فوری طور پر سوال یہ اٹھتا ہے کہ قومی ٹیم کے حوالے سے کریم بینزیما اور میتھیو ویلبینا کا کیا بنے گا؟

اخبار ’لیقویپ‘ کے ترجمان ونسینٹ کہتے ہیں: ’مجھے نہیں لگتا کہ بینزیما کو یورو 2016 میں شامل کیا جائے گا۔‘

اخبار ’لا فیگارو‘ کے ترجمان برونو کا کہنا ہے ’ڈے شامس کے پاس بینزیما کو نہ چننے کے علاوہ اور کوئی چارہ نہیں ہے۔‘

اس کے علاوہ ٹی وی چینل ’بینگ سپورٹ ٹی وی‘ کے فٹبال پروگرام کے میزبان ڈیرن نے کہا: ’یہ بہت نقصان دہ بات ہوگی کیونکہ دونوں کھلاڑیوں کو جرمنی اور انگلینڈ کے خلاف کسی بھی میچ کے لیے نہیں چنا گیا ہے۔‘

ویسے بھی اس وقت بیمزیما زخمی ہیں لیکن اگر وہ نہیں بھی ہوتے تو یہ تصور کرنا مشکل ہے کہ انھیں چنا جاتا۔

اگلے ہفتے لندن کے شہر کے ویمبلی سٹیڈیم میں انگلینڈ اور فرانس کے درمیان فرینڈلی میچ کھیلا جائے گا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ویمبلی سٹیڈیم میں دونوں ممالک کے درمیان گذشتہ میچ سنہ 2010 میں کھیلا گیا تھا، جب فرانس دو گول سے جیت گیا تھا۔

فرانس کی جانب سے گول کس نے کیے؟ بینزیما اور ویلبینا۔

اسی بارے میں