پاک بھارت سیریز، سری لنکا میں کھیلے جانے کا امکان

تصویر کے کاپی رائٹ Both Photos by AFP
Image caption پاکستان اور بھارت کے درمیان اس ڈیڈلاک کو ختم کرنے کے لیے انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کے صدر جائلز کلارک بھی حرکت میں آگئے ہیں

پاکستان اور بھارت کے درمیان کرکٹ سیریز آئندہ ماہ سری لنکا میں منعقد ہونے کا امکان ہے۔

بی بی سی کو معلوم ہوا ہے کہ دونوں ملکوں کی جانب سے اس سیریز کے بارے میں سخت موقف اختیار کیے جانے کے بعد یہ تجویز سامنے آئی ہے کہ یہ سیریز سری لنکا میں کھیلی جائے۔

پاک بھارت کرکٹ: شہریار خان اور ششانک منوہر کی ملاقات

پاک بھارت کرکٹ روابط کی بحالی کے لیے کوششیں

’کوئی بھی کھیل حکومتوں کی رائے تبدیل نہیں کر سکتا‘

تاہم یہ پہلے سے طے شدہ پروگرام کی مکمل ٹیسٹ، ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی سیریز کے بجائے پانچ یا چھ محدود اوورز کے میچز پر مشتمل ہوگی۔

بھارتی کرکٹ بورڈ کی ورکنگ کمیٹی کا اجلاس 27 نومبر کو ہونے والا ہے جس میں اس تجویز کی منظوری کے امکانات روشن ہیں۔

یاد رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کا پاک بھارت سیریز کے بارے میں موقف یہ ہے کہ چونکہ یہ اس کی ہوم سیریز ہے لہذا وہ اس کی میزبانی متحدہ عرب امارات میں کرنا چاہتا ہے لیکن بھارتی کرکٹ بورڈ نے یہ سیریز متحدہ عرب امارات میں کھیلنے سے انکار کر دیا ہے اور یہ تجویز پیش کی ہے کہ پاکستانی ٹیم بھارت آکر سیریز کھیلے جس پر پاکستان تیار نہیں۔

پاکستان اور بھارت کے درمیان اس ڈیڈلاک کو ختم کرنے کے لیے انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کے صدر جائلز کلارک بھی حرکت میں آگئے ہیں اور انہی کی کوششوں کے نتیجے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہریار خان اور بھارتی کرکٹ بورڈ کے صدر ششانک منوہر کے درمیان اتوار کے روز دبئی میں آئی سی سی کے صدر دفتر میں ملاقات ہوئی۔

سری لنکا میں اس سیریز کے انعقاد کی تجویز بھی اسی سلسلے کی ایک اہم کڑی ہے۔

جائلز کلارک کا کہنا ہے کہ بین الاقوامی کرکٹ کے وسیع تر مفاد میں پاک بھارت کرکٹ روابط بہت اہمیت کے حامل ہیں اور ان دونوں کے درمیان کرکٹ سیریز ہر صورت میں ہونی چاہیے۔

سری لنکا کی ٹیم چونکہ آئندہ ماہ نیوزی لینڈ کے دورے پر ہوگی لہذا سری لنکا کے میدانوں کی دستیابی کا مسئلہ بھی درپیش نہیں ہوگا۔

سری لنکا سنہ 2002 میں بھی پاکستان کی آسٹریلیا کے خلاف ہوم سیریز کے پہلے ٹیسٹ کی میزبانی کر چکا ہے۔

اسی بارے میں