ریو اولمپکس میں روسی ایتھلیٹس کی شرکت کا ’امکان نہیں‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ایتھلیٹکس کی عالمی تنظیم آئی اے اے ایف کی معائنہ کمیٹی آئندہ ماہ جنوری میں روس جائے گی

یورپی ایتھلیٹکس فیڈریشن کا کہنا ہے کہ آئندہ سال برازیل کے شہر ریو میں ہونے والے اولمپکس مقابلوں تک روس کا بین الاقوامی مقابلوں میں واپسی کا امکان کم ہے۔

ایتھلیٹکس کی عالمی تنظیم آئی اے اے ایف نے کھیلوں میں ممنوعہ ادویات کے استعمال سے متعلق رپورٹ سامنے آنے کے بعد روس کی ایتھلیٹکس فیڈریشن پر پابندی عائد کر دی تھی۔

ایتھلیٹکس مقابلوں میں روس کی شرکت معطل

’روس کو ایتھلیٹکس مقابلوں سے معطل کر دیا جائے‘

ممنوعہ ادویات کا استعمال: ’ایتھلیٹکس ادارہ تحقیق دبا رہا ہے‘

ایتھلیٹکس کی عالمی تنظیم آئی اے اے ایف کی معائنہ کمیٹی آئندہ ماہ جنوری میں روس جائے گی۔

یورپی ایتھلیٹکس فیڈریشن کے صدر کا کہنا ہے کہ ’انھیں شرائط پر عمل کرنا ہو گا لیکن وہ ریو اولمپکس میں شرکت نہیں کر سکیں گے۔‘

روس جانے والی معائنہ کمیٹی مارچ کے آخر میں آئی اے اے ایف کونسل کے اجلاس میں اپنی رپورٹ جمع کروائے گی۔ جو کہ ریو اولمپکس کے مقابلوں سے محض پانچ ماہ پہلے ہو گا۔

یاد رہے کہ سنہ 2016 میں برازیل کے شہر ریو میں اولمپکس کے مقابلے اگست میں شروع ہوں گے۔

ایتھلیکٹس کے ہفتہ وار میگزین کو انٹرویو میں یورپی ایتھلیٹکس فیڈریشن کے صدر مسٹر ہنسن نے کہا کہ ’انھیں روایتی تبدیلیاں کرنا ہوں گی اور پہلے ان تمام لوگوں سے چھٹکارا حاصل کرنا ہو گا۔‘

’ہم روس کے ایتھلیکٹس میں چند اچھے لوگوں کو جانتے ہیں۔ مجھے یقین ہے کہ انھیں منتخب کیا جائے گا۔ ہم امید کر سکتے ہیں کہ کچھ ایسے افراد سامنے آئیں جو یہ سمھجتے ہوں کہ تبدیلیاں کہاں ہونی چاہیے۔‘

ایتھلیٹکس کی عالمی تنظیم آئی اے اے ایف نے کھیلوں میں ممنوعہ ادویات کے انسداد کے عالمی ادارے (ورلڈ اینٹی ڈوپنگ ایجنسی) کی رپورٹ سامنے آنے کے بعد یہ فیصلہ کیا تھا، جس کے مطابق روس میں ’حکومت ڈوپنگ میں ملوث تھی۔‘

رواں سال نومبر میں آئی اے اے ایف کے کونسل اراکین نے روس پر پابندی لگائے جانے کے حق میں ووٹ دیا تھا۔

اسی بارے میں