زین الدین زیدان ریال میڈرڈ کے کوچ بن گئے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption زیدان کا کہنا ہے: ’میں اس کام میں اپنا دل و جان لگا دوں گا تاکہ ہر چیز ٹھیک انداز میں ہو‘

ہسپانوی فٹبال کلب ریال میڈرڈ نے اپنے کوچ رافیل بینٹیز کو برطرف کر دیا ہے۔ نومبر میں روایتی حریف بارسیلونا کے ہاتھوں شکست کے بعد وہ تنقید کی زد میں تھے۔

رافیل بینٹیز صرف سات ماہ تک اس عہدے پر فرائض سرانجام دے سکے۔

منگل کو کلب کے بورڈ کے اجلاس کے بعد 55 سالہ ہسپانوی کوچ کو ان کے عہدے سے ہٹانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ریال میڈرڈ کی بی ٹیم کے کوچ زین الدین زیدان کو اب ان کی جگہ تعینات کیا گیا ہے۔

سابق فرانسیسی کھلاڑی فرانس کی سنہ 1998 میں عالمی کپ جیتنے والی ٹیم کا حصہ تھے اور ماضی میں ریال میڈرڈ کی نمائندگی بھی کر چکے ہیں۔

ان کا کہنا ہے: ’میں اس کام میں اپنا دل و جان لگا دوں گا تاکہ ہر چیز ٹھیک انداز میں ہو‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption رافیل بینٹیز صرف سات ماہ تک اس عہدے پر فرائض سرانجام دے سکے

خیال رہے کہ زیدان کو اعلیٰ سطح پر انتظامی امور سنبھالنے کا تجربہ نہیں ہے اور ان کی تعیناتی کلب کے لیے خطرہ مول لینے کے مترادف ہوسکتی ہے تاہم انھیں طویل مدت کے لیے کلب کا مستقل بے سربراہ کے طور پر بھی دیکھا جا رہا ہے۔

ریال میڈرڈ کی طرف سے بطور کھلاڑی کھیلتے ہوئے ان کا شمار مہنگے ترین کھلاڑیوں میں ہوتا تھا۔

ریال میڈرڈ نے سنہ 2001 میں زین الدین زیدان کی ٹیم میں شمولیت کے لیے اطالوی کلب یووینٹس کو ریکارڈ چار کروڑ 58 لاکھ پاؤنڈ ادا کیے تھے۔

اس وقت ریال میڈرڈ کی ٹیم میں لوئیس فیگو، راؤل، رونالڈو اور ڈیوڈ بیکہم جیسے مایہ ناز کھلاڑی بھی ٹیم کا حصہ تھے۔

ریال میڈرڈ کی طرف سے پانچ سال کھیلتے ہوئے انھوں نے سنہ 2003 میں سپینشن لیگ میں کلب کی کامیابی میں اہم کردار ادا کیا تھا اور اسی سال وہ تیسری مرتبہ فیفا ورلڈ پلیئر بھی قرار پائے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ریال میڈرڈ کی طرف سے بطور کھلاڑی کھیلتے ہوئے زیدان کا شمار مہنگے ترین کھلاڑیوں میں ہوتا تھا

اسی بارے میں