سنچورین ٹیسٹ میں انگلینڈ کا عمدہ آغاز

تصویر کے کاپی رائٹ reuters
Image caption 33 سالہ سٹیون کک نے اپنے پہلے میچ کی پہلی اننگز میں شاندار سنچری سکور کی

سنچورین میں کھیلے جانے والے چوتھے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کے کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے جنوبی افریقہ کی پہلی اننگز کے 475 رنز کے جواب میں دو وکٹوں کے نقصان پر 138 رنز بنا لیے ہیں۔

جنوبی افریقہ نے ہاشم آملہ، پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے 33 سالہ سٹیون کک اور وکٹ کیپر ڈی کاک کی سنچریوں کی بدولت 475 رنز سکور کیے ہیں۔

جواب میں انگلینڈ نے دن کے اختتام پر دو وکٹوں کے نقصان پر 138 رنز بنائے ہیں اور کپتان الیسٹر کک اور جو روٹ وکٹ پر موجود ہیں۔ کپتان السٹرکک نے 67 رنز جبکہ جو روٹ 31 رنز بنا کر کریز پر موجود ہیں۔

نوجوان فاسٹ بولر گاغیزو ربادہ نے انگلینڈ کی گرنے والی دونوں وکٹیں حاصل کیں۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

دوسرے روز جب کھیل شروع ہوا تو جنوبی افریقہ نے 329 رنز پر پانچ کھلاڑی آؤٹ پر اننگز شروع کی۔ ناٹ آؤٹ بیٹسمین ٹیمبا بووما کریز جلد ہی آؤٹ ہو پویلین لوٹ گئے لیکن وکٹ کیپر ڈی کاک نے عمدہ کھیل جاری رکھا اور اپنے کریئر کی پہلی سنچری سکور کی۔

انگلینڈ کی طرف سے بین سٹروک سب سے کامیاب بولر رہے۔ انھوں نے چار کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔ جنوبی افریقہ کی اننگز کی خاص بات سٹیون کک اور ہاشم آملہ کی شاندار سنچریاں تھیں۔

سٹیون کک نے 14 چوکوں کی مدد سے 115 اور ہاشم آملہ نے 19 چوکوں کی مدد سے 109 رنز بنائے۔

چار ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز میں انگلینڈ کو دو صفر کی فیصلہ کن برتری حاصل ہے۔

ڈربن میں کھیلے جانے والے پہلے کرکٹ ٹیسٹ میچ میں انگلینڈ نے جنوبی افریقہ کو 241 رنز سے شکست دی تھی۔

کیپ ٹاؤن میں کھیلا جانے والا دوسرا ٹیسٹ میچ ہار جیت کے فیصلے کے بغیر ختم ہو گیا تھا۔

جوہانسبرگ میں کھیلے جانے والے تیسرے ٹیسٹ میں مہمان ٹیم نے میزبان ٹیم کو سات وکٹوں سے شکست دی تھی۔

اسی بارے میں