مینی پیکیو کی ہم جنس پرستی کی مخالفت جاری

فلپائن کے باکسر اور سیاست دان مینی پیکیو نے ہم جنس پرستی سے متعلق اپنا مخالفانہ بیان دہرایا ہے۔

مینی پیکیو نے گذشتہ روز ’ہم جنس پرستوں کو جانوروں سے بدتر‘ قرار دیا تھا تاہم اس کے بعد انھوں نے اپنے بیان پر معافی مانگ لی تھی۔

اپنے آبائی قصبے جنرل سینٹوس میں بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا: ’میں جو کہہ رہا ہوں وہ صحیح ہے، میرا مطلب ہے میں سچ بول رہا ہوں اور بائبل نے بھی یہی بتایا ہے۔‘

باکسنگ کے عالمی چیمپیئن کے مطابق ان کی غلطی صرف یہ ہے کہ انھوں نے ہم جنس پرستوں کا جانوروں سے موازنہ کیا ہے۔

مینی پیکیو کے اس ابتدائی بیان کے بعد کھیلوں کا سامان بنانے والی امریکہ کی معروف کمپنی نائیکی نے ان کے ساتھ اپنا معاہدہ ختم کر دیا تھا۔

نائیکی نے ایک بیان میں مینی پیکیو کے تبصرے کو ’مکروہ‘ قرار دیا تھا۔

مینی پیکیو نے ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا تھا ’جانور ہم جنس پرستوں سے بہتر ہیں کیونکہ وہ نر اور مادہ کے فرق کو پہچانتے ہیں۔‘

فلپائن کے باکسر کے اس بیان کی عالمی سطح پر مذمت کی گئی تھی۔

باکسٹ بال کھیلنے والے ہم جنس پرست جیسن کولنز اور مینی پیکیو کے حریف باکسر فلوئڈ مے ویدر نے ان کے اس بیان کی مذمت کی تھی۔

اس بیان کے بعد انھوں نے فیس بک پر لکھا: ’میں نے ایل جی بی ٹی کمیونٹی کی مذمت نہیں کی، تاہم میں ہم جنس شادیوں کے خلاف ہوں۔‘

جنرل سینٹوس میں مینی پیکیو کے سٹاف نے باکسر کے اکاؤنٹ پر چھپنے والی پوسٹ کی تصدیق کی ہے۔

مینی پیکیو کا کہنا ہے ’میں خوش ہوں اور ہمیشہ خوش رہتا ہوں کیونکہ خدا میرے ساتھ ہے۔‘

فلپائن کے باکسر اپریل میں ٹموتھی بریڈلی سے ہونے والے باکسنگ مقابلے کے بعد ریٹائر ہونے کا ارارہ رکھتے ہیں جس کے بعد وہ سیاست میں زیادہ کردار ادا کرنا چاہتے ہیں۔

فلپائن میں ہم جنس پرستی جرم کے زمرے میں نہیں آتی تاہم ہم جنسوں کی شادی خلافِ قانون ہے۔

اسی بارے میں