کرائسٹ چرچ: برنز اور سمتھ کی شاندار سنچریاں

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption آج کے کھیل کی اہم بات جو برنز اور سٹیو سمتھ سنچریاں ہیں

کرائسٹ چرچ میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کے کھیل کے اختتام پر آسٹریلیا نے نیوزی لینڈ کے خلاف چار وکٹوں کے نقصان پر 363 رنز بنا لیے ہیں۔

آسٹریلیا کو نیوزی لینڈ کی برتری ختم کرنے کے لیے اب صرف مزید سات رنر کی ضرورت ہے اور پہلی اننگز میں اس کی چھ وکٹیں باقی ہیں۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

آج کے کھیل کی اہم بات جو برنز اور سٹیو سمتھ سنچریاں ہیں۔

جوبرنز 170 رنز بنا کر نیل وینگر کی بال پر کیچ آوٹ ہوئے اور سٹیو سمتھ بھی 138 رنز بنانے کے بعد وینگر کا نشانہ بنے۔

دونوں بلے بازوں نے اپنی پارٹنرشپ کے دوران 289 رنز بنائے جو آسٹریلیا کی نیوزی لینڈ کے خلاف دوسری بڑی پارٹنرشپ ہے۔

اس سے پہلے نیوزی لینڈ کی پوری ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 370 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی تھی۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے مارٹن گپٹل اور ٹام لیتھن نے اننگز کا آغاز کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption اپنا آخری ٹیسٹ میچ کھیلنے والے برینڈن مکلم نے تیز ترین سنچری کا ریکارڈ 54 گیندوں پر چار چھکوں اور 16 چوکوں کی مدد سے بنایا

آسٹریلیا نے دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا تو صرف 74 رنز پر نیوزی لینڈ کے چار کھلاڑی آوٹ ہو گئے تھے۔

اس کے بعد برینڈن مکلم نے انتہائی جارحانہ انداز میں بیٹنگ کرتے ہوئے کوری اینڈرسن کے ساتھ پانچویں وکٹ کی شراکت میں 179 رنز بنائے۔ مکلم نے 79 گیندوں پر 21 چوکوں اور چھ چھکوں کی مدد سے 145 رنز کی اننگز کھیلی۔

اپنا آخری ٹیسٹ میچ کھیلنے والے برینڈن مکلم نے تیز ترین سنچری کا ریکارڈ 54 گیندوں پر چار چھکوں اور 16 چوکوں کی مدد سے بنایا۔

آسٹریلیا کی جانب سے نیتھن لیون نے تین، ہیلز وڈ، جیمز پیٹنسن اور جیکسن برڈ نے دو، دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں آسٹریلیا کو ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔

ویلنگٹن میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا نے نیوزی لینڈ کو اننگز اور 52 رنز سے شکست دی تھی۔

اسی بارے میں