شاہد آفریدی کا ٹی ٹوئنٹی سے ریٹائرمنٹ واپس لینے پر غور

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption شاہد آفریدی کا کہنا ہے کہ جب تک ان کی فٹنس اچھی ہے وہ کھیلتے رہیں گے

پاکستان کی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی نے انٹرنیشنل کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے اعلان پر نظرثانی کا اشارہ دے دیا ہے۔

شاہد آفریدی کا کہنا ہے کہ گھر والوں، دوستوں اور خاص طور پر ان کے بڑوں کا ان پر زبردست دباؤ ہے کہ وہ انٹرنیشنل کرکٹ سے ریٹائر نہ ہوں۔

کرکٹ کی ویب سائٹ ’کرک انفو‘ سے بات کرتے ہوئے شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ ’میں یہ کہہ رہا ہوں کہ مجھ پر ٹی ٹوئنٹی سے ریٹائر نہ ہونے کے لیے بہت دباؤ ہے۔‘

شاہد آفریدی نے کہا کہ ’مجھے کہا جا رہا ہے کہ میں کرکٹ کو جاری رکھوں اور پاکستان ٹیم میں ایسا کوئی ٹیلنٹ بھی نہیں آ رہا جس کی جگہ میں نے لی ہوئی ہے۔‘

خیال رہے کہ شاہد آفریدی کرکٹ ورلڈ کپ 2015 کے بعد ٹیسٹ اور ایک روزہ کرکٹ سے پہلے ہی ریٹائر ہوچکے ہیں۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ وہ آئندہ ماہ بھارت میں ہونے والے ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کھیلنے کے بعد ٹی ٹوئنٹی کرکٹ سے بھی ریٹائر ہو جائیں گے۔

کرک انفو کو دیے گئے انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ فی الوقت ان کی ساری توجہ ورلڈ ٹی ٹوئنٹی پر ہے جو ان کے بقول ان کے لیے بہت بڑا چیلنج ہے اور اس کے بعد ہی وہ ریٹائرمنٹ کے بارے میں کوئی حتمی فیصلہ کر پائیں گے۔

’پہلے تو میں یہ دیکھنا چاہتا ہوں کہ ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان ٹیم کہاں تک پہنچتی ہے۔ کیا میں اتنی صلاحیت رکھتا ہوں کہ صرف اپنی کارکردگی کی بدولت اپنی ٹیم کو آگے تک لے جا سکتا ہوں یا نہیں۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ ’میں یہ بھی دیکھنا چاہتا ہوں کہ میں کہاں ہوں۔ جب تک میری فٹنس زبردست ہے، اور توانائی موجود ہے تو میں کرکٹ کھیل سکتا ہوں۔ لیکن میں یہ سب واضح طور پر ورلڈ ٹی ٹوئنٹی سے بعد بتا پاؤں گا۔‘

شاہد آفرید بدھ سے بنگلہ دیش میں شروع ہونے والے ٹی ٹوئنٹی ایشیا کپ اور اس کے بعد بھارت میں ہونے والے آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان ٹیم کی کپتانی کر رہے ہیں۔

اسی بارے میں