جنوبی افریقہ: ایرون فنگیسو کا بولنگ ایکشن غیر قانونی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

جنوبی افریقہ کے سپنر ایرون فنگیسو کا بولنگ ایکشن ٹیسٹ کے بعد غیر قانونی قرار دیا گیا ہے جس کے بعد ان کی بھارت میں رواں ماہ ورلڈ ٹی 20 ٹورنامنٹ میں شرکت مشکوک ہوگئی ہے۔

فنگیسو کے بولنگ ایکشن کو گذشتہ ماہ ڈومیسٹک ون ڈے کے دوران مشکوک قرار دیا گیا تھا جس کے بعد ان کے بولنگ ایکشن کو پریٹوریا کی لیبارٹری میں ٹیسٹ کے لیے بھیجا گیا تھا۔

خبر رساں ادارے اے ایف کے مطابق جنوبی افریقہ کرکٹ کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ فنگیسو کا ٹیسٹ پریٹوریا میں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل سےمنظور شدہ لیبارٹری سے کرایا گیا جہاں اس بات کی تصدیق ہوئی کہ ان کا بازو مقررہ حد 15 ڈگری سے تجاوز کر رہا ہے۔

جنوبی افریقہ کرکٹ نے فینگیسو کا نام آسٹریلیا کے خلاف جمعے سے شروع ہونے والی تین میچوں کی سیریز کے ابتدائی دو ٹی ٹوئنٹی میچوں سے واپس لیا ہے لیکن وہ سکواڈ کے ساتھ ہی رہیں گے تاہم وہ ٹیم کے بولنگ کوچ کلاڈ ہینڈرسن اور کرکٹ ساؤتھ افریقہ کے منیجر وینسنٹ بارنز کے ساتھ اپنے بولنگ ایکشن پر کام کرتے رہیں گے۔

خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق جنوبی افریقہ کرکٹ نے کہا ہے کہ فینگیسو پیر کو ایک دفعہ پھر ٹیسٹ کے لیے جائیں گے جہاں اس بات کا فیصلہ ہوگا کہ وہ نو مارچ کو آسٹریلیا کے خلاف آخری میچ اور ورلڈ ٹی 20 کے لیے جنوبی افریقہ کی ٹیم کے ساتھ جا سکیں گے یا نہیں۔

فینگیسو کا بولنگ ایکشن ڈومیسٹک ون ڈے کپ کے سیمی فائنل میں مشکوک قرار دیا گیا تھا لیکن انھوں نے اپنی ٹیم کی جانب سے فائنل کھیلا تھا۔

فینگیسو کی ٹیم دی لائنز نے گذشتہ اتوار کو فائنل میں کیپ کوبراز کو شکست دی تھی۔

اس میں میں فینگیسو نے 33 رنز کے عوض تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا تھا۔

اسی بارے میں