پاکستانی ویمن سکواڈ کی زخمی اوپنر ہسپتال سے فارغ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

ورلڈ ٹی 20 میں پاکستانی ویمن سکواڈ کی زخمی ہونے والی اوپنر جویریہ خان کو ہسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا ہے کہ تاہم سکواڈ میں دوبارہ شامل کرنے کے لیے ان کی میڈیکل رپورٹ کا انتظار ہے۔

بدھ کے روز ورلڈ ٹی 20 مقابلوں میں ویسٹ انڈیز کے مدمقابل کھیلے جانے والے میچ میں پاکستانی ویمن سکواڈ کی اوپنر جویریہ خان کے دائیں ہاتھ کا انگوٹھا فریکچر ہوگیا تھا۔

کرکٹ ویب سائٹ کرک انفو کے مطابق بدھ کو چینئی میں کھیلے جانے والے اس میچ میں شامیلا کونل کے پہلے ہی اوور میں ایک گیند جویریہ خان کے انگوٹھے سے ٹکرائی۔ بعد میں گیند ان کے ہیلمٹ کی گرِل سے ٹکرائی اور وہ گر گئیں۔

27 سالہ جویریہ خان پاکستان کی جانب سے اوپنر کے فرائض سرانجام دے رہی تھیں، انھیں سٹریچر پر ڈال کر میدان سے لے جایا گیا۔

ویسٹ انڈیز کی کپتان سٹیفنی ٹیلر نے کہا ہے کہ ہمیں اس حادثے سے بہت صدمہ پہنچا ہے۔

’ہمیں بتایا گیا ہے کہ وہ اب ٹھیک ہیں اور اس سے ہمیں تسلی ہو گئی ہے۔‘

ویسٹ انڈیز نے یہ میچ چار رنز سے جیت لیا تھا۔

خبر رساں ادارے روئٹرز نے جمعرات کو خبر دی کہ جویریہ خان کوہسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا ہے۔

ٹیم مینیجر عائشہ اشہر کے مطابق ابھی جویریہ کی میڈیکل رپورٹ کا انتظار کیا جا رہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ میڈیکل رپورٹ کے آنے تک وہ اس بارے میں اپنی رائے کا اظہار نہیں کر سکتیں کہ آیا جویریہ کھیل سکتی ہیں یا نہیں۔