پاکستان کی خواتین ٹیم کو سینٹرل کنٹریکٹ مل گئے

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption پاکستانی ٹیم کی کپتان ثنا میر کو کیٹگری اے میں رکھا گیا ہے

پاکستان کرکٹ بورڈ نے ٹی20 ورلڈ کپ میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والی ویمن کرکٹ ٹیم کی 22 کھلاڑیوں کو 2016 کے لیے سینٹرل کنٹریکٹ دینے کا اعلان کیا ہے۔

ٹی 20 ورلڈ کپ میں عورتوں کی ٹیم نے گروپ میچوں میں انڈیا کی ٹیم کو بھی شکست سے دوچار کیا تھا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ایک اعلان کے مطابق 22 کھلاڑیوں کو سینٹرل کنٹریکٹ کی پیشکش کی گئی ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے اعلان کےمطابق چیئرمین شہریار خان نے 2015 میں خواتین کھلاڑیوں کی مقامی اور عالمی سطح پر عمدہ کارکردگی کے بعد انھیں سینٹرل کنٹریکٹ کی پیشکش کی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اسماویہ اقبال کھوکھر کو کیٹگری اے میں رکھا گیا ہے

جن 22 کھلاڑیوں کو سینٹرل کنٹریکٹ کی پیشکش کی گئی ہے ان میں ثنا میر، بسمہ معروف، جویریہ ودود، اسماویہ اقبال کھوکھر، ندا رشید، انم امین، سیدہ نین فاطمی عابدی، سعدیہ یوسف، سدرہ نواز، ربیعہ شاہ، سدرہ امین، ناہید خان، عالیہ ریاض، ارم جاوید، مرینہ اقبال، ثانیہ اقبال، منیبہ علی صدیقی، الماس اکرم، ایمن انور، ڈیانا بیگ، عائشہ ظفر اور کائنات امتیاز شامل ہیں۔

سینٹرل کنٹریکٹ جو یکم جنوری 2016 سے شروع ہو گا اسے چار زمروں میں تقسیم کیا گیا ہے۔

کیٹگری اے: ثنا میر، بسمہ معروف، جویریہ ودود، اسماویہ اقبال کھوکھر۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

کیٹگری بی: ندا رشید، انم امین، سیدہ نین فاطمی عابدی۔

کیٹگری سی: سعدیہ یوسف، سدرہ نواز، ربیعہ شاہ، سدرہ آمین، ناہید خان، عالیہ ریاض، ارم جاوید، مرینہ اقبال، ثانیہ اقبال۔

کیٹگری ڈی: منیبہ علی صدیقی، الماس اکرم، ایمن انور، ڈیانا بیگ، عائشہ ظفر، کائنات امتیاز۔

اسی بارے میں