کوہلی سچن سے بہتر اور مکمل بلے باز ہیں:عمران خان

پاکستان کی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان عمران خان نے انڈین کرکٹر وراٹ کوہلی کو سچن تندولکر سے بہتر بیٹسمین قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایک مکمل بلے باز ہیں۔

انھوں نے یہ بات اسلام آباد میں انڈین اخبار ’دی ہندوستان ٹائمز‘ کو دیے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں کہی۔

٭ آئی پی ایل: رنز بنانے والوں میں وراٹ سر فہرست

٭ ٹی 20 میچوں میں کوہلی کے تیز ترین ہزار رنز

دنیائے کرکٹ میں ایک زمانے سے کھلاڑیوں کا تقابل کیا جاتا رہا ہے اور حالیہ دنوں میں بھارت میں ’ماسٹر بلاسٹر‘ کے نام سے معروف سچن تندولکر اور وراٹ کوہلی کے درمیان بھی موازنہ کیا جا رہا ہے اور سوشل میڈیا پر دونوں کے مداحوں کی کمی نہیں۔

انٹرویو میں عمران خان نے کہا: ’میں نے جن کھلاڑیوں کو دیکھا ہے ان میں وراٹ کوہلی مکمل کھلاڑیوں میں سے ایک ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption عمران خان اپنے زمانے کے کامیاب ترین کپتانوں میں شمار ہوتے ہیں

پاکستان کے سابق آل راؤنڈر کا کہنا تھا: ’میں نے کرکٹ میں مختلف ادوار گزرے ہیں۔ سنہ 80 کی دہائي میں ویوین رچرڈز تھے، پھر برائن لارا اور پھر سچن تندولکر نمایاں رہے۔‘

عمران کے مطابق اب وراٹ کوہلی نمایاں ہیں۔ انھوں نے کہا: ’وہ بہت باصلاحیت ہیں۔ وہ دونوں پیروں پر کھیلتے ہیں اور وہ میدان کے ہر کونے میں شاٹ کھیل سکتے ہیں۔‘

انھوں نے کہا ’ان کی صلاحیت اور تکنیک سے قطع نظر ان کا مزاج بہت عمدہ ہے۔ ان کا مزاج سچن سے بہتر ہے۔ کوہلی مشکل مواقع پر اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہیں جبکہ ایسے بعض موقعوں پر سچن ایسا نہیں کر پاتے تھے۔‘

خیال رہے کہ سچن کے پاس کرکٹ کے بہت سے ریکارڈ ہیں اور ایک بار خود انھوں نے کہا تھا کہ کوہلی میں ان ریکارڈز کو توڑنے کی صلاحیت ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption عمران کے مطابق کوہلی دونوں پیروں پر میدان میں چاروں جانب شاٹ کھیلتے ہیں

عمران خان انڈیا اور پاکستان کے درمیان ورلڈ کپ کا میچ دیکھنے کے لیے کولکتہ پہنچے تھے۔ اس بارے میں ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا: ’پاکستان کی ہار کو دیکھنا بہت تکلیف دہ تھا لیکن کوہلی نے بہت عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا۔‘

انھوں نے مزید کہا: ’میں بیٹسمینوں کو بولر کی نظر سے دیکھتا ہوں اور یہ سوچتا ہوں کہ انھیں کیسے آؤٹ کیا جائے۔ ذرا غور کریں کوہلی مشکل حالات میں کیسے کھیلتا ہے۔ وہ کسی سے بھی بہتر ہے۔ میں کہوں گا کہ وہ بین الاقوامی سطح پر اس وقت بہترین ہے۔ آپ ان پر کسی میچ میں بھی بھروسہ کر سکتے ہیں۔‘

اسی بارے میں