یورو کپ: کروشیا اور جمہوریہ چیک کا میچ ڈرا

تصویر کے کاپی رائٹ GETTY IMAGES

فرانس میں جاری یورو کپ 2016 میں کروشیا اور جمہوریہ چیک کے درمیان کھیلا گیا میچ بغیر کسی نتیجے کے ختم ہو گیا۔

کروشیا میں اور جمہوریہ چیک نے میچ میں دو دو گول کیا لیکن آخری لمحات تک کوئی بھی ٹیم فیصلہ کن گول کرنے میں ناکام رہی۔

میچ کے دوران سٹیڈیم میں بیٹھے کروشیا کے شائقین کی جانب سے گروانڈ میں پٹاخے پھینکے جس کے بعد کچھ دیر کے لیے میچ روک دیا گیا۔

یورپین فٹبال ایسوسی ایشن نے اس معاملے کی تحقیقات کے لیے ڈسپلنری کارروائی شروع کر دی ہے۔

گروپ ڈی میں سپین اور ترکی کے درمیان میچ میں سپین نے ترکی کو صفر کے مقابلے میں تین گول سے شکست دے دی ہے۔

یوروکپ کے گروپ ای کے میچ میں اٹلی نے سویڈن کو ہرا کر اگلے مرحلےکے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔

سویڈن کی ٹیم عمدہ کھیل پیش کرنے کے باوجود گول نہ کر سکی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption اٹلی کے سٹرائیکر ایڈے نے 90ویں منٹ میں گول کر کے ٹیم کی فتح کو یقینی بنا دیا

دونوں ٹیمیں میچ کے 89ویں تک کوئی گول نہ کر سکیں اور 90ویں منٹ میں اٹلی کے سٹرائیکر ایڈے نے شاندار گول کی اٹلی کی فتح کو یقینی بنا دیا۔

فرانس کے بعد اٹلی نے ٹورنامنٹ کے اگلے روانڈ کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔

سویڈن کے سٹار سٹرائیکر زلتان ابراہیموچ دو میچوں میں کوئی گول نہ کرسکے۔

اٹلی کے اٹھتیس سالہ گول کیپر گگی بوفون نے ہمیشہ کی طرح ایک بار پھر عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption سویڈن کو زلتان ابراہیموچ سے بہت امیدیں وابستہ تھیں لیکن وہ امیدوں پر پورا نہ اتر سکے

سویڈن کا اگلے مرحلےکے لیے کوالیفائی کرنا اب انتہائی مشکل ہو چکا ہے۔ سویڈن نے اگلا میچ بیلجیئم سےکھیلنا ہے جو پہلے میچ میں اٹلی سے ہار گیا تھا۔

اٹلی نے اپنے پہلے میچ میں بیلجیئم کو دو صفر سےشکست دے کر ماہرین کو حیران کر دیا تھا۔

ٹورنامنٹ سے پہلے ماہرین کی اٹلی سے زیادہ امیدیں وابستہ نہیں تھیں لیکن اسے پچھلے پچاس برسوں میں اٹلی کی بدترین ٹیم قرار دیا تھا۔اٹلی نے ہمیشہ بڑے ٹورنامنٹوں میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور اس بار پھر اس نےماہرین کو غلط ثابت کر دیا ہے۔

اسی بارے میں