عامر اب بھی دنیا کا بہترین بولر بن سکتا ہے: مصباح

تصویر کے کاپی رائٹ ap
Image caption عامر کو سنہ 2010 میں 36۔18 کی اوسط سے 19 وکٹیں لینے کے لیے پلیئر آف دا سیریز قرار دیا گیا تھا

پاکستان کی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق کے مطابق محمد عامر اب بھی دنیا کے بہترین بولر بن سکتے ہیں۔

بائیں ہاتھ سے گیند کرنے والے محمد عامر نے سنہ 2010 میں انگلینڈ کے خلاف لارڈز کے میدان پر سپاٹ فکسنگ کے الزام میں پانچ سال کی پابندی کا سامنا کیا ہے۔

چھ برس قبل لگنے والی پابندی کے بعد سے محمد عامر نے کسی ٹیسٹ میچ میں شرکت نہیں کی ہے لیکن وہ جولائی میں انگلینڈ کے خلاف ہونے والی چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے لیے دستیاب ہیں۔

مصباح الحق نے کہا ’جس طرح سے وہ بولنگ کر رہے ہیں اسی وجہ سے وہ ٹیم میں ہیں۔‘

’آپ ان کی بولنگ رفتار، سوئنگ، کنٹرول کو دیکھیں، سب کچھ ہے۔ وہ اب بھی دنیا کے بہترین بولر بن سکتے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ’اسے پتہ ہے کہ وہ دباؤ میں ہے لیکن وہ اسے اچھی طرح سے نمٹ رہا ہے‘

مصباح نے کہا کہ ’واپسی کے بعد سے انھوں نے جس قسم کی بھی کرکٹ کھیلی ہے وہاں انھوں نے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔

’اسے پتہ ہے کہ وہ دباؤ میں ہے لیکن وہ اسے اچھی طرح سے نمٹ رہا ہے۔‘

محمد عامر انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی کے بعد پاکستانی ٹیم کے ساتھ نیوزی لینڈ، بنگلہ دیش اور بھارت کے دورے کر چکے ہیں تاہم یہ پہلا موقع ہے کہ وہ انگلینڈ میں ایکشن میں دکھائی دیں گے۔

عامر کو سنہ 2010 میں انگلینڈ کے خلاف سیریز میں 36۔18 کی اوسط سے 19 وکٹیں لینے کے لیے پلیئر آف دا سیریز قرار دیا گیا تھا۔

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ لارڈز میں 14 جولائی سے شروع ہو رہا ہے۔

اسی بارے میں