دوسرا کواٹر فائنل: نظریں گیرتھ بیل اور ہیزارڈ پر

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سیمی فائنل کون کھیلے گا، بیلجیئم یا ویلز۔ فیصلہ گیرتھ بیل یا ایڈن ہیزارڈ کریں گے

یورو 2016 کےدوسرے کواٹر فائنل میں ویلز اور بیلجیئم آج مدمقابل ہوں گے۔ آج کی فاتح ٹیم کا سیمی فائنل میں پرتگال سے مقابلہ کرنا ہوگا۔

بیلجیئم کی ٹیم سٹار کھلاڑیوں پر مشتمل ہے جبکہ ویلز کا سارا انحصار ریال میڈرڈ کے فارورڈگیرتھ بیل پر ہے جو ٹیم کو تن تنہا کواٹر فائنل تک کھینچ لائے ہیں۔

ویلز نے ایک برس پہلےیوروکپ کے کوالیفائنگ میچ میں بیلجیئم کو ایک صفر سے ہرا دیا تھا۔اگر ویلز نے کواٹر فائنل میں بیلجیئم کو پچھاڑ دیا تو وہ اپنی تاریخ میں پہلی بار کسی بڑے ٹورنامنٹ کے سیمی فائنل تک کوالیفائی کرے گا۔

ویلز نے 58 برسوں بعد کسی بڑے ٹورنامنٹ کے لیے کوالیفائی کیا ہے اور اس کا سہرا اس کے سٹار کھلاڑی گیرتھ بیل پر ہے جنھوں نے کوالیفائنگ راؤنڈ میں ویلز کی جانب سے کیے جانے والے کل گیارہ گولوں میں سے سات گول کیے اور وہ یورو 2016 میں ابھی تک تین گول کر چکے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption میچ دیکھنے کے لیے دونوں ٹیموں کے مداح بڑی تعداد میں سٹیڈیم پہنچ چکے ہیں

بیلجیئم کی ٹیم یورپ کے بڑے کلبوں میں کھیلنے والے کھلاڑیوں پر مشتمل ہے اور بیلجئیم کی ٹیم عالمی رینکنگ میں دوسرے نمبر پر ہے۔

بیلجیئم کی ٹیم نے جس انداز میں ہنگری کو چار صفر سے شکست دی ہے اس کے بعد ماہرین اسے ایک بار پھر ٹورنامنٹ کی فیورٹ ٹیموں میں سے ایک قرار دے رہے ہیں۔

بیلجئیم کی ٹیم مڈفیلڈر ایڈن ہیزارڈ کےگرد گھومتی ہے۔ گذشتہ میچ میں ایڈن ہیزارڈ نے جس عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا اگر وہ اس کو برقرار رکھ سکے تو یہ ویلز کےلیے اچھی نوید نہیں گی۔ ہنگری کےخلاف میچ میں ایڈن ہیزارڈ نے نہ صرف خود گول کیا بلکہ دوسرا گول انھیں کے پاس پر ہوا۔

ایڈن ہیزارڈ کے علاوہ رومیلو لوکا، کیون ڈی برائنا بھی عمدہ کھیل پیش کر رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption گیرتھ بیل تن تنہا ویلز کو ٹورنامنٹ میں اتنا دور تک لے آئے ہیں

البتہ بیلجئیم کو اپنے دفاعی کھلاڑیوں کے حوالے سے پریشانی لاحق ہے۔ کپتان ونسٹ کومپنی ان فٹ ہونے کی وجہ سے ٹورنامنٹ میں شریک نہیں ہو سکے اور گذشتہ میچ میں عمدہ کھیل پیش کرنے والے ورٹانگن ان فٹ ہو کر ٹیم سے باہر ہو چکے ہیں۔ ورٹانگن کے علاوہ ورمیلن بھی دو ییلو کارڈ دکھائے جانے کی وجہ سے اس میچ میں شرکت نہیں کر سکتے۔

دوسرے جانب ویلز اپنی پوری دفاعی قوت کے ساتھ میدان میں اترے گا۔ ویلز کے کپتان ایشلے ولیئمز جو پچھلے میچ کے آخری لمحات میں کندھا زخمی ہونے کے باوجود میدان سے باہر جانے کے لیے تیار نہ تھے، مکمل طور پر فٹ ہو چکے ہیں۔

اسی بارے میں