نوواک جوکووچ ومبلڈن کے تیسرے راؤنڈ میں ہی ہار گئے

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

ٹینس سٹار نوواک جوکووچ ومبلڈن میں امریکی کھلاڑی سیم کیوری سے شکست کے بعد ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے ہیں۔

سیم کیوری سے ہارنے کے ساتھ عالمی نمبر ایک نوواک جوکووچ کی اس سال گرینڈ سلیم ٹائٹل جیتنے کی امید بھی ختم ہو گئی ہے۔

تیسرے راؤنڈ میں جوکووچ کو عالمی نمبر 28 سیم کیوری نے سات چھ، چھ ایک، تین چھ اور سات چھ سے شکست دی۔

یہ جوکووچ کی سنہ 2015 میں فرینچ اوپن کے فائنل میں شکست کے بعد کسی بھی بڑے ٹورنامنٹ میں پہلی شکست ہے۔

جوکووچ کو امید تھی کہ وہ یہ ٹورنامنٹ جیت کر تیسری مرتبہ ومبلڈن کا فاتح بننے کے ساتھ ساتھ ایک سال میں تیسرا ٹورنامنٹ بھی جیت جائیں گے۔

رواں سال جوکووچ پہلے ہی آسٹریلین اوپن اور فرینچ اوپن جیت چکے ہیں۔ اگر وہ یہ ٹورنامنٹ بھی جیت جاتے تو ٹینس کی تاریخ میں لگاتار پانچ بڑے ٹورنامنٹ جیتنے والے دوسرے کھلاڑی بن جاتے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP GETTY
Image caption یہ نوواک جوکووچ کی سنہ 2015 میں فرینچ اوپن کے فائنل میں شکست کے بعد کسی بھی بڑے ٹورنامنٹ میں پہلی ہار ہے

ومبلڈن میں نوواک جوکووچ کو شکست دینے کے بعد سیم کیوری نے کہا کہ ’یہ ناقابل یقین ہے اور خاص طور پر ومبلڈن میں۔‘

سیم کیوری نے کہا کہ ’میں انتہائی خوش ہوں۔ میں نے بریک پوائنٹس پر اچھا کھیلا اور جب بھی نوواک کو بریک پوائنٹ حاصل ہوا، میں اچھی سرو کروانے میں کامیاب ہوا۔

’نوواک نے آتے ہی چار گیمز جیت لیں، خوش قسمتی سے بارش کی وجہ سے میچ متاثر ہوا اور مجھے کچھ وقت مل گیا۔ میں اسے ایک راؤنڈ سمجھ رہا ہوں اور مجھے تو یہ بھی نہیں علم کہ میں اگلا میچ کس کے خلاف کھیلنے والا ہوں۔‘

اسی بارے میں