بغیر پیراشوٹ کے 25 ہزار فٹ کی بلندی سے چھلانگ

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

امریکہ کے لیوک ایکنز پہلے ایسے انسان ہیں جنھوں نے کامیابی کے ساتھ 25 ہزار فٹ کی بلندی سے بغیر پیراشوٹ کے چھلانگ لگائی اور بحفاظت جال میں گرے۔

ایکنز نے مختلف بلندیوں سے تقریباً 18 ہزار بار چھلانگ لگا رکھی ہے۔

انھوں نے یہ چھلانگ جنوبی کیلیفورنیا کے سیمی ویلی میں لگائی اور جال کے مرکز میں گرے۔

دو منٹ پر مشتمل ان کی مہم کو فوکس ٹی وی پر براہ راست نشر کیا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ GETTY
Image caption مسٹر ایکنس نے مختلف بلندیوں سے تقریبا 18 ہزار بار چھلانگ لگا رکھی ہے

گرنے کے دوران 42 سالہ ایکنز نے 120 میل یعنی تقریباً 193 کلومیٹر فی گھنٹے کی رفتار حاصل کی۔

انھوں نے اعتراف کیا کہ چھلانگ لگانے سے قبل وہ نروس تھے۔

انھوں نے کہا ’یہ بس ہو گیا۔ میرے منہ سے تو الفاظ نکل ہی نہیں رہے ہیں۔‘

انھوں نے کہا کہ ایک وقت وہ اس چھلانگ کو منسوخ کرنے کا ارادہ کر رہے تھے کیونکہ انھیں حفاظتی اقدام کے طور پر پیراشوٹ پہننے کا حکم دیا گیا تھا اور اس کے اضافی وزن کی وجہ سے ان کا گرنا اور بھی مشکل ہو جاتا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption اس چھلانگ کے لیے انھوں نے دوسال مشق کی

تاہم منتظمین نے چھلانگ سے ذرا قبل یہ شرط ہٹا لی۔

ان کے ترجمان جسٹن ایکلن نے کہا ’ایکنز کی چھلانگ ان کے 26 سالہ کریئر کی انتہا ہے جس میں انھوں نے بغیر پیراشوٹ اور ونگ سوٹ کے سب سے زیادہ بلندی سے چھلانگ کا اپنا ذاتی اور عالمی ریکارڈ قائم کیا ہے۔‘

ایکنز جو کہ امریکہ میں پیراشوٹ ایسوسی ایشن میں مشیر ہیں انھوں نے بتایا کہ ان کے دوست کو دو سال قبل یہ خیال آیا تھا۔

اسی بارے میں