آسٹریلیا 154 گیندوں پر ایک رن بھی نہ بنا سکا

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption دونوں ٹیموں کے درمیان تین میچوں کی سیریز کا دوسرا میچ چار اگست سے گال میں کھیلا جائے گا

سری لنکا نے گذشتہ دنوں آسٹریلیا کے خلاف پالیکیلے میں کھیلے گئے پہلے ٹیسٹ میچ میں فتح حاصل کی جو کہ اس کی آسٹریلیا کے خلاف مجموعی طور پر دوسری جیت تھی۔

مہمان ٹیم نے تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے پہلے میچ میں ایک انوکھا ریکارڈ بھی قائم کیا۔

٭ سری لنکا نے آسٹریلیا کو 106 رنز سے شکست دے دی

وہ ریکارڈ یہ ہے کہ عالمی نمبر ایک ٹیسٹ ٹیم آسٹریلیا نے سری لنکا کے خلاف دوسری اننگز میں 154 گیندوں پر ایک بھی رن سکور نہیں کیا۔

سری لنکا کے 268 رنز کے ہدف کے تعاقب میں آسٹریلیا کی پوری ٹیم میچ کے پانچویں روز 161 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔

اس طرح سری لنکا نے اس میچ میں 106 رنز سے کامیابی حاصل کی۔دلچسپ بات یہ ہے کہ سری لنکا سنہ 1999 کے بعد پہلی اور 27 میچوں میں دوسری مرتبہ آسٹریلیا کو شکست دینے میں کامیاب ہوا ہے۔

آسٹریلیا کی جانب سے او کیف اور نیول نے نویں وکٹ کی شراکت میں فی اوور صفر عشاریہ ایک تین کی رفتار سے رنز بنائے۔

اس سے قبل یہ ریکارڈ جنوبی افریقہ کے ہاشم آملہ اور اے بی ڈیویلیئرز کے درمیان قائم ہوا تھا جنھوں نے گذشتہ سال دسمبر میں انڈیا کے خلاف صفر عشاریہ چھ سات کی اوسط سےرنز بنائے تھے۔

سری لنکا اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے گئے اس میچ میں کوشل مینڈس نے عمدہ 176 رنز بنائے جبکہ رنگانا ہیراتھ نے میچ میں نو وکٹیں حاصل کی تھیں۔

دونوں ٹیموں کے درمیان تین میچوں کی سیریز کا دوسرا میچ چار اگست سے گال میں کھیلا جائے گا۔

اسی بارے میں