وارونکا نے جوکووچ کو ہرا کر یوایس اوپن جیت لیا

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption یہ وارنکا کے کریئر کا پہلا یو ایس اوپن اور مجموعی طور پر تیسرا گرینڈ سلیم اعزاز ہے

سال کے آخری گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ یوایس اوپن کے فائنل میں سوئٹزرلینڈ کے سٹین وارونکا نے عالمی نمبر ایک سربیا کے نواک جوکو وچ کو ایک طویل مقابلے کے بعد شکست دے دی ہے۔

تھرڈ سیڈ وارونکا نے دفاعی چیمپیئن جوکووچ کو ایک کے مقابلے میں تین سیٹس سے شکست دی۔

اتوار کو کھیلے جانے والے میچ میں جوکووچ نے پہلا سیٹ ٹائی بریکر پر سات چھ سے جیتا تاہم اس کے بعد سوئس کھلاڑی نے شاندار کھیل کا مظاہرہ کیا اور بقیہ تینوں سیٹ چھ چار، سات پانچ اور چھ تین کے سکور سے جیت کر مقابلے میں فتح حاصل کر لی۔

چار گھنٹے جاری رہنے والے میچ میں جوکووچ تھکے ماندے نظر آئے اور انھیں میچ کے دوران ڈاکٹر کی مدد بھی لینی پڑی۔

یہ وارنکا کے کریئر کا پہلا یو ایس اوپن اور مجموعی طور پر تیسرا گرینڈ سلیم اعزاز ہے۔

وہ اس سے قبل 2014 میں آسٹریلین اوپن اور گذشتہ برس فرنچ اوپن بھی جیت چکے ہیں۔

31 سالہ وارونکا یو ایس اوپن جیتنے والے دوسرے سب سے عمر رسیدہ کھلاڑی ہیں۔ سب سے زیادہ عمر میں یو ایس اوپن جیتنے کا اعزاز کین روزویل کے پاس ہے جنھوں نے 1970 میں 35 برس کی عمر میں یہ گرینڈ سلیم مقابلہ جیتا تھا۔

فتح کے بعد وارونکا کا کہنا تھا کہ ’میرا عزم بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنا تھا۔ میں نے کبھی گرینڈ سلیم جیتنے کو مقصد نہیں بنایا اور ہر میچ میں بہترین کھیل پیش کرنے کی کوشش کرتا ہوں۔‘

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں