کرکٹ: ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر پوائنٹس سسٹم متعارف

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے پر کھلاڑیوں کے لیے پوائنٹس پر مبنی سزاؤں کو متعارف کروایا ہے اور جس سے قصوروار کھلاڑیوں کو قدر سخت سزا دی جا سکے گی۔

جمعرات کو کرکٹ کی عالمی تنظیم آئی سی سی نے اپنے ضابطہ اخلاق میں ’ڈی میرٹ پوائنٹس‘ ( کسی خامی یا برائی کی مناسبت سے درجہ بندی) کا اضافہ کیا ہے۔

اس کے تحت دوبرس کے دوران جب بھی کوئی کھلاڑی کسی بھی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرے گا تو اس غلطی کی نوعیت کے حساب سے اس کو ڈی میرٹ پوائٹنس دیے جائیں گے۔

ابھی تک کھیل کے دوران ایسی غلطیوں کے لیے کھلاڑی کو جرمانہ کیا جاتا ہے جو چھوٹی غلطیوں جیسے امپائر کے فیصلے سے اختلاف کرنے یا گالی گلوچ کرنے پر یہ سزا اب بھی برقرار رہےگی۔

لیکن اب پوائٹنس کی بنیاد پر اگر کھلاڑی اس طرح کی غلطیاں بار بار دہراتا ہے تو اسے بطور سزا معطل بھی کیا جا سکتا ہے۔

آئی سی سی نے ڈی آر ایس یعنی ڈیسیژن ریویو سسٹم میں بعض تبدیلیوں کی بھی تصدیق کی ہے۔ اس تبدیلی سے ایل بی ڈبلیو کے ناٹ آؤٹ فیصلوں کو تبدیل کرنا مزید آسان ہوجائےگا۔

آن فیلڈ امپائر کے ایل بی ڈبلیو فیصلے کو ٹی وی کے امپائر سے تبدیل کروانے کے لیے یہ دیکھنا ضروری ہوگا کہ گیند کم سے کم سٹمپ کے کسی بھی حصے کو لگ رہی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں