پاکستان ویسٹ انڈیز کا دوسرا ٹی ٹوئنٹی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

پاکستان اور ویسٹ انڈیز کی کرکٹ ٹیمیں ہفتے کی شب دبئی میں دوسرے ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں مدمقابل ہورہی ہیں۔ تین میچوں کی سیریز میں پاکستان کو ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔

اس نے جمعہ کی شب دبئی ہی میں کھیلے گئے پہلے میچ میں نو وکٹوں سے کامیابی حاصل کی تھی۔ پاکستانی بولرز خصوصاً عماد وسیم کی کریئر بیسٹ پانچ وکٹوں کی شاندار بولنگ نے ویسٹ انڈیز کو صرف ایک سو پندرہ تک محدود رکھا تھا۔

* ویسٹ انڈیز ٹیم میں کتنا دم خم ہے؟

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

پاکستانی کپتان سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ انہیں اس بات کا بخوبی اندازہ ہے کہ متحدہ عرب امارات کی پچز کس طرح کھیلتی ہیں اور اسی مناسبت سے منصوبہ بندی کی گئی تھی۔

سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ وکٹ سے سپنرز کو مدد ملی اور انہوں نے کنڈیشنز کا بھرپور فائدہ اٹھایا۔

سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ ان کی کوشش ہوگی کہ دوسرے میچ میں کامیابی حاصل کرکے سیریز کو اپنے نام کرلیں۔

ویسٹ انڈیز کے کپتان کارلوس بریتھ ویٹ کا کہنا ہے کہ ان کی ٹیم جارحانہ اور دلچسپ کرکٹ کھیلنے کے لیے مشہور ہے لیکن اس میچ میں وہ کنڈیشنز کو صحیح طور پر سمجھ نہ سکی۔

بریتھ ویٹ نے عماد وسیم کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ وہ کیریبئن لیگ کھیلنے کی وجہ سے ویسٹ انڈین بیٹسمینوں کو اچھی طرح سمجھتے ہیں لیکن ہم نے بھی ان کے لیے منصوبہ بندی کی تھی بدقسمتی سے اس پر عمل درآمد نہ ہوسکا۔

تین میچوں کی سیریز کا تیسرا اور آخری میچ ستائیس ستمبر کو ابوظہبی میں کھیلا جائے گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption عماد نے چار اوورز میں 5 کھلاڑی آؤٹ کیے

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں