پاکستان کا ویسٹ انڈیز کے خلاف کلین سویپ

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

ابوظہبی میں کھیلے گئے تیسرے ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میچ میں پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو آٹھ وکٹوں سے شکست دے دی ہے۔

پاکستان نے مطلوبہ ہدف دو وکٹوں وکٹ کے نقصان پر سولہویں اوور میں پورا کر لیا۔

شعیب ملک 43 جبکہ بابر اعظم 27 پر ناٹ آؤٹ رہے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان کے پہلے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی شرجیل خان تھے جنہوں نے 11 رنز بنائے اسی اوور میں خالد لطیف 21 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے دونوں کو ولیمز نے آوٹ کیا۔

اس سے پہلے پاکستان نے ٹاس جیت کر ویسٹ انڈیز کو کھیلنے کی دعوت دی۔ ویسٹ انڈیز نے پاکستان کو 104 رنز کا ہدف دیا ہے۔

اس میچ سے قبل پاکستان نے اس سیریز کے دونوں میچوں میں کامیابی حاصل کی اور اس وقت پاکستانی ٹیم کی کوشش ہوگی کہ وہ ویسٹ انڈیز کو وائٹ واش کر سکے۔

پاکستان نے ٹاس جیت کر ویسٹ انڈیز کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تو جانسن چارلز اور آندرے فلیچر نے بیٹنگ کا آغاز کیا تاہم دونوں اوپنرز جم کر نہیں کھیل سکے۔

ویسٹ انڈیز کی جانب سے سب سے مؤثر بلے باز مارلن سیمیولز رہے جنہوں نے 42 رنز بنائے۔

پاکستان کی جانب سے عماد وسیم کامیاب ترین بولر رہے جنہوں نے جانسن چارلز اور کیڈوک والٹن کو اپنے دوسرے اوور میں یکے بعد دیگرے بولڈ کیا۔ اس کے علاوہ انھوں نے اپنے تیسرے اوور میں ڈوائن براوو کو بھی بولڈ کیا ہے۔

اس کے علاوہ محمد نواز کی گیند پر نکولس پوران شعیب ملک کے ہاتھوں کیچ آوٹ ہوئے۔

اوپنر آنڈرے فلیچر رن آوٹ ہوئے تھے۔

پاکستانی کپتان سرفراز احمد نے ٹی ٹوئنٹی سیریز کے آخری میچ میں ٹاس جیت کر جب پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا تو انھوں نے اس موقعے پر کہا کہ اس فیصلے کی وجہ شام کو بولنگ کے دوران گراؤنڈ میں پڑنے والی اوس سے بچنا اور دوسری اننگز میں اس سے فائدہ اٹھانا تھا۔ اس میچ کے لیے پاکستانی ٹیم نے دو تبدیلیاں کی ہیں۔ وہاب ریاض اور حسن علی کی جگہ محمد عامر اور رومان رئیس کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔ ادھر ویسٹ انڈیز نے بھی دو کھلاڑی تبدیل کیے ہیں۔ ایون لوئس کی جگہ چیڈک والٹن اور بدری کی جگہ کیسرک ویلیمز کو شامل کیا گیا ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں