فلپ ہیوز کے والدین کا تفتیش کے دوران واک آؤٹ

فلپ ہیوز تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption دو سال قبل فلپ ہیوز کی المناک موت نے دنیائے کرکٹ کو ہلا کر رکھ دیا تھا

آسٹریلوی کرکٹر فلپ ہیوز کی موت کی تفتیش کے دوران ان کے خاندان کے افراد کمرۂ عدالت سے اٹھ کر باہر چلے گئے۔

25 سالہ بلےباز 25 نومبر 2014 کو سڈنی میں گردن پر گیند لگنے کے دو دن بعد دماغ کے اندر جریانِ خون کی وجہ سے چل بسے تھے۔

پانچ روزہ سماعت کےدوران اس بات کا تعین کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ آیا ان کی زندگی بچائی جا سکتی تھی۔

سماعت کے دوران شہادت دینے والے بعض کھلاڑیوں پر یہ کہنے کے بعد بددیانتی کا الزام لگایا جا رہا ہے کہ انھیں اس دن کے واقعات یاد نہیں ہیں۔

یہ تفتیش پیر کو نیو ساؤتھ ویلز کی تفتیشی عدالت میں منعقد ہوئی، اور اس دوران بریڈ ہیڈن، ڈگ بولنجر اور ڈیوڈ وارنر نے گواہی دی۔

عدالت نے اس بات کا جائزہ لیا کہ آیا ہیوز کو باقاعدہ طور پر باؤنسر پھینک کر نشانہ بنایا گیا، اور یہ کہ مخالف ٹیم نے ان پر پریشان کن جملے کسے تھے۔

اس بارے میں سوال کیے گئے کہ کیا ہیوز کی گردن پر گیند لگنے سے پہلے ایک بولر نے ان سے کہا تھا کہ 'میں تمھیں قتل کر دوں گا۔'

ہیوز کے والدین نے اس وقت عدالت سے واک آؤٹ کر لیا جب خاندان کے وکیل گریگ میلک نے ان کھلاڑیوں پر تنقید کی جو بار بار کہتے تھے کہ 'مجھے یاد نہیں ہے، میں بھول گیا ہوں۔'

میلک نے کہا: 'انجامِ کار ایک منصوبہ بنا تھا، جملے کسے جا رہے تھے، اور فلپ ہیوز کے خلاف باؤنسر پھینکے جا رہے تھے، جن کی وجہ سے ان کے زخمی ہونے کا خطرہ بڑھ گیا۔

'ایک بولر نے مسلسل نو باؤنسر پھینکے جن کا ہدف لیگ سٹمپ یا پھر بلےباز (ہیوز) کا جسم تھا۔'

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

کرکٹ آسٹریلیا کے وکیل نے جھوٹی گواہی کے الزامات کی تردید کی ہے۔

تفتیشی عدالت کی وکیل کرسٹینا سٹرن نے کہا کہ جملے بازی اور باؤنسروں کے بارے میں تشویش 'غیرضروری' ہے اور انھیں تحقیقات کا حصہ نہیں بنانا چاہیے۔

نیو ساؤتھ ویلز کے اعلیٰ تفتیش کار مائیکل بارنز چار نومبر کو تفتیش کے نتائج پیش کریں گے۔

اس سے قبل کرکٹ آسٹریلیا کی جانب سے پیش کی جانے والی ایک رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ فاسٹ اور میڈیم فاسٹ بولروں کا سامنا کرتے ہوئے بلےبازوں کو لازمی طور پر ہیلمٹ پہننے چاہییں۔

تاہم اس نے یہ بھی کہا تھا کہ نئے حفاظتی ہیلمٹ پہننے کے باوجود ہیوز کی جان نہیں بچ سکتی تھی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں