میرے خاوند شریف انسان ہیں: میلانیا ٹرمپ

میلانیا ٹرمپ تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption میلانیا اور ٹرمپ کی شادی کو 11 سال ہو گئے ہیں اور ان کا ایک لڑکا ہے

ٹرمپ کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ نے اپنے خاوند کا دفاع کرتے ہوئے انھیں 'جنٹل مین' قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ ان پر دست درازی کا الزام لگانے والی خواتین 'جھوٹی' ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے ویڈیو ٹیپ میں عورتوں کے بارے میں جو فحش الفاظ ادا کیے تھے وہ ناقابلِ قبول تو ہیں لیکن ان کے خاوند کی نمائندگی نہیں کرتے۔

میلانیا نے کہا کہ ٹرمپ نے 'لڑکوں کی سی باتیں' کی ہیں لیکن اس کے لیے انھیں ٹی وی شو کے میزبان بلی بش نے 'اکسایا' تھا۔

اس ٹیپ کی وجہ سے درجنوں رپبلکن رہنما اپنی ہی جماعت کے صدارتی امیدوار ٹرمپ کی حمایت سے دست بردار ہو گئے تھے۔

اس کے بعد سے کئی ایسی خواتین بھی سامنے آئی ہیں جنھوں نے کہا ہے کہ ٹرمپ نے ان سے دست درازی کی تھی۔ ٹرمپ نے اس کی تردید کی ہے۔

میلانیا نے سی این این کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ 'میں جانتی ہوں کہ وہ خواتین کی عزت کرتے ہیں، لیکن وہ اپنا دفاع کر رہے ہیں کیوں کہ یہ سب جھوٹ ہے۔

'مجھے اپنے خاوند پر اعتماد ہے۔ میرے خاوند نرم دل اور جنٹل مین ہیں اور وہ کبھی بھی ایسا نہیں کریں گے۔'

انھوں نے دعویٰ کیا کہ یہ سکینڈل دراصل ہلیری کلنٹن کی ٹیم اور میڈیا نے ٹرمپ کی امیدواری کو نقصان پہنچانے کی خاطر کھڑا کیا ہے۔

'کیا (میڈیا نے) کبھی ان خواتین کا پس منظر جاننے کی کوشش کی ہے؟'

ٹرمپ کے جنسی سکینڈل کے بعد پہلی بار بات کرتے ہوئے میلانیا نے اپنے خاوند کے خواتین کے بارے میں رویے کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ انھوں نے کبھی غیر مناسب رویہ اختیار نہیں کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption امریکی صدارتی انتخابات آٹھ نومبر کو منعقد کیے جائیں گے

انھوں نے کہا کہ الٹا خواتین ٹرمپ کو ان کے سامنے اپنا فون نمبر دیا کرتی تھیں۔

ایکسس ہالی وڈ کی ٹیپ کے بارے میں انھوں نے کہا: 'میں نے اپنے خاوند سے کہا کہ یہ زبان نامناسب ہے۔ یہ ناقابلِ قبول ہے۔ اور مجھے حیرت ہوئی تھی کیوں کہ یہ وہ شخص نہیں ہے جسے میں جانتی ہوں۔'

امریکی صدارتی انتخابات میں صرف تین ہفتے باقی رہ گئے ہیں اور رائے عامہ کے جائزوں کے مطابق ڈیموکریٹ پارٹی کی امیدوار ہلیری کلنٹن کو ٹرمپ پر خاصی برتری حاصل ہے۔

اسی بارے میں