زیک گولڈ سمتھ پارلیمان سے مستعفی ہو گئے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption زیک گولڈ سمتھ گذشتہ انتخابات میں لندن کے نواحی انتخابی حلقے رچمنڈ پارک اور کنسگٹن سے حکمران کنزرویٹو پارٹی کے ٹکٹ پر کامیاب ہوئے تھے

برطانوی حکومت کی جانب سے ہیتھرو ائیر پورٹ پر ایک نئے رن وے کی تعمیر کی اجازت دیے جانے پر کنزرویٹو پارٹی کے رکن پارلیمان اور جمائما خان کے بھائی زیک گولڈ سمتھ نے پارلیمان سے احتجاجاً استعفی دے دیا ہے۔

زیک گولڈسمتھ گذشتہ انتخابات میں لندن کے نواحی انتخابی حلقے رچمنڈ پارک اور کینسگٹن سے حکمران کنزرویٹو پارٹی کے ٹکٹ پر کامیاب ہوئے تھے، تاہم اس کے بعد وہ لندن کے میئر کا انتخاب ہار گئے تھے۔

اپنی انتخابی مہم اور پھر دوبارہ لندن کے میئر کی دوڑ کے دوران بھی زیک گولڈ سمتھ نے ہیتھرو پر ایک ایک نئے رن وے کی مخالفت کی تھی۔

منگل کو ہیتھرو پر نئے رن وے کی منظوری کے اعلان کے بعد مسٹر گولڈ سمتھ کا کہنا تھا کہ یہ ایک ’تباہ کن‘ فیصلہ ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اب وہ ایک آزاد امیدوار کے طور پر دوبارہ انتخاب لڑیں گے۔

یاد رہے کہ برطانوی حکومت ایک عرصے سے لندن کے دو بڑے ہوئی اڈوں، ہیتھرو یا گیٹوِک کی گنجائش میں اضافہ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے، تاہم اسے کئی حلقوں کی جانب سے مخالفت کا سامنا رہا ہے۔

زیک گولڈ سمتھ کا آبائی حلقہ مجوزہ رن وے کے فضائی راستے پر واقع ہے اور ان کے حلقے کے رہائشیوں کو خدشہ ہے کہ نئے رن وے کی تعمیر سے طیاروں کے شور میں بہت اضافہ ہو جائے گا۔

انتخابی مہم کے دوران گولڈ سمتھ نے اپنے ووٹروں سے وعدہ کیا تھا کہ وہ نئے رن وے کی تعمیر کی مخالفت کریں گے۔ تاہم حکومت کی جانب سے اہیتھرو ائر پورٹ کی توسیع کی منظوری سے پہلے ہی انھوں نے عندیہ دے دیا تھا کہ اگر ایسا ہوا تو وہ 'اپنے وعدے کا بھرم' رکھتے ہوئے پارلیمان کی نشست سے استعفیٰ دے دیں گے۔

منگل کو پارلیمان میں خطاب کرتے ہوئے گولڈ سمتھ نے کہا کہ ’حکومت نے ایک ایسے راستے کا انتخاب کیا ہے جو نہ صرف غلط ہے بلکہ اس کا نتیجہ ناکامی کے سوا کچھ اور نہیں ہو گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption گولڈ سمتھ ایک عرصے سے ہیتھرو ہوائی اڈے کے توسیعی منصوبے کی مخالفت کرتے چلے آئے ہیں

’یہ فیصلہ غلط ہے کیونکہ لاکھوں لوگ اس رن وے کے مضر ماحولیاتی اثرات سے متاثر ہوں گے، کیونکہ یہ برے اثرات اس منصوبے کا لازمی نتیجہ ہیں۔ جہاں تک منصوبے کے ڈوبنے کی بات ہے تو اس کی وجہ یہ ہے کہ اس منصوبے میں بہت سے مسائل ہیں، اس کے اخراجات اور قانونی پیچیدگیاں اتنی زیادہ ہیں کہ مجھے یقین ہے کہ یہ منصوبہ کامیاب نہیں ہو گا۔‘

زیک گولڈ سمتھ کا مزید کہنا تھا کہ ’ہیتھرو ایئر پورٹ کی توسیع کا فیصلہ آنے والے کئی برسوں تک حکومت کے گلے کا پھندا بنا رہے گا۔‘