گذشتہ ہفتے کی تصویری جھلکیاں

دنیا بھر میں پیش آنے والے اہم واقعات کی تصویری جھلکیاں

تصویر کے کاپی رائٹ Ahmed Jadallah / Reuters
Image caption ایک عراقی لڑکا اپنے مال مویشیوں کو بچانے کے لیے حقاظتی مقام تک لے جانے کی کوشش کر رہا ہے۔ عراق کی خصوصی افواج خود کو دولتِ اسلامیہ کہلانے والی شدت پسند تنظیم کے قبضے کو ختم کرنے کے لیے پہلی مرتبہ موصل کے مضافاتی علاقوں میں داخل ہوئی ہیں۔ اس کارروائی میں ہزاروں عراقی بےگھر ہوچکے ہیں۔
تصویر کے کاپی رائٹ Kevin Lamarque / Reuters
Image caption بین الاقوامی مالیاتی ادارے انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ کی سربراہ کرسٹین لاگارڈ نے امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں سترویں یاک پولاک سالانہ تحقیقی کانفرنس کی افتتاحی تقریب سے خطاب کیا۔
تصویر کے کاپی رائٹ David Gray / Reuters
Image caption آسٹریلیا کے شہر پرتھ کے قریب زرعی علاقوں میں خشک سالی کے باعث نمک کی تہہ اور بچائے گئے چھوٹے چھوٹے پانی کے زخیرے نظر آ رہے ہیں۔
تصویر کے کاپی رائٹ Andres Martinez Casares / Reuters
Image caption ہیٹی میں آنے والے طوفان میتھیو کے نتیجے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 800 تک پہنچ گئی ہے۔ ورلڈ فوڈ پرواگرام کا کہنا ہے کہ آٹھ لاکھ افراد کو فوری طور پر امداد کی ضرورت ہے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Mario Anzuoni / Reuters
Image caption امریکی اداکارہ جیسیکا چسٹین کے ہاتھوں کے نقش سیمنٹ میں محفوظ کر لیے گئے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Edgard Garrido / Reuters
Image caption میکسیکو میں 'گزر جانے والوں' کی یاد میں سالانہ جشن منایا گیا۔ یکم نومبر کو معصوموں کا دن تصور کیا جاتا ہے جہاں گذشتہ سال میں یہ دنیا چھوڑ جانے والے بچوں کو ان کے گھر والے یاد کرتے ہیں جبکہ دو نومبر کو بڑوں کو یاد کیا جاتا ہے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Toby Melville / Reuters
Image caption لندن میں روسی سفارتخانے کے باہر روس کی جانب سے شام میں بمباری کے خلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین نے شامی شہریوں کی علامت کے طور پر پتلیوں کے جسمانی اعضا جمع کر دیے۔
تصویر کے کاپی رائٹ David W Cerny / Reuters
Image caption چیک ریپبلک کے ایک چڑیا گھر کے اہلکار پیلیکنز کو سردیوں کی وجہ سے محفوظ مقام پر منتقل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔
تصویر کے کاپی رائٹ Emilio Naranjo / EPA
Image caption ریال مڈریڈ کے مڈ فیلڈر گیرتھ بیل نے ایک پریس کانفرنس میں اعلان کیا کہ ان کا ریال مڈریڈ کے ساتھ معاہدہ 2022 تک طے پاگیا ہے۔
تصویر کے کاپی رائٹ Kevin Frayer / Getty Images)
Image caption چین میں آیا بننے کے لیے ایک خصوصی کلاس میں شریک طالبات کھانا کھا رہی ہیں۔ اس پرواگرام میں عمبماً چین کے غریب دیہی علاقوں سے خواتین آتی ہیں۔