جنوبی افریقہ کے صدر کے خلاف تحریک عدم اعتماد

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

جنوبی افریقہ کی پارلیمنٹ صدر جیکب زوما کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر بحث کا آغاز کرنے والی ہے۔ کچھ حلقے ان کے استعفے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

صدر زوما کے خلاف ہونے والی اینٹی کرپشن تحقیقات میں گزشتہ ہفتے مالی بد عنوانی کے الزامات سامنے آئے ہیں۔

تاہم جنوبی افریقہ میں حزب اقتدار افریقن نیشنل کانگریس یا اے این سی نے کہا ہے کہ صدر زوما کے خلاف تحریک کا کامیابی کا کوئی امکان نہیں ہے۔

گزشتہ ایک سال میں یہ پہلا موقع ہے کہ صدر زوما تحریک عدم اعتماد کا سامنا کر رہے ہیں۔

ملک کی انسدادِ بدعنوانی کے ادارہے کی طرف سے کی جانے والی تحقیقات کی بنیاد پر کہا گیا ہے کہ صدر زوما کی حکومت کے خلاف فوجداری معاملات میں مزید تحقیقات کے لیے ایک عدالتی کمشن تشکیل دیا جائے۔

ان تحقیقات میں یہ شواہد سامنے آئے ہیں صدر زوما سے روابط رکھنے والے گپتا خاندان نے امکانی طور پر وزرا کے تقرر میں غیرموزوں سیاسی اثر و رسوخ استعمال کیا۔

صدر زوما اور گپتا خاندان نے ان الزامات کی تردید کی ہے۔

عدم اعتماد کی تحریک اپوزیشن کی سب سے بڑی جماعت ڈیموکریٹک الائنس نے پیش کی ہے جس میں صدر زوما پر ’نوزائیدہ جمہوریت‘ کو تباہ کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

ڈیموکریٹک الائنس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ صدر زوما برانڈ کی کرپشن، معاشی بدانتظامی، اور جھوٹ اور ایک بہتر جنوبی افریقہ تعمیر کرنے کا منصوبہ ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے۔

تاہم صدر زوما کی جماعت اے این سی کے سیکریٹری جنرل گویڈے منتاشے نے ان سے استعفے کے مطالبے کو قبل از وقت قرار دیا ہے اور کہا کہ رپورٹ میں کسی کو بھی مجرم قرار نہیں دیا گیا۔

اسی بارے میں