ٹرمپ اور اوباما میں ملاقات، چند ’ناخوشگوار‘ لمحات

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

وائٹ ہاؤس میں جب نومنتخب صدر ٹرمپ کی صدر اوباما سے ملاقات ہوئی تو دونوں میں عداوت بھی بعض موقعوں پر چھپائی نہیں جا سکی۔

نومنتخب صدر نے انتحابی مہم کے دوران صدر اوباما کو تاریخ کا بدترین صدر قرار دیا تھا جبکہ صدر اوباما نے کہا تھا کہ ٹرمپ صدر منتخب ہونے کے اہل ہی نہیں ہیں۔

صدر اوباما سے ملاقات، میرے لیے اعزاز کی بات: ٹرمپ

ارب پتی کاروباری شخصیت اور اب نومنتخب صدر نے صدر اوباما کی امریکہ میں پیدائش پر سوالات اٹھائے تھے اور صدر اوباما نے اسے کھلے عام مضحکہ خیز قرار دیا تھا۔

اب دونوں کی وائٹ ہاؤس میں تقریباً ڈیڑھ گھنٹے ملاقات ہوئی اور جب وہ میڈیا کے سامنے آئے تو دونوں نے ماضی کی تلخی کو پیچھے چھوڑنے کی کوشش کی۔

دونوں نے اتحاد اور اقتدار کی پرامن طریقے سے منتقلی کے حوالے سے گرمجوشی سے بات چیت کی۔

لیکن وہاں موجود کیمرے ایک اور کہانی بیان کرتے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

اگر خلا میں بہت زیادہ گھورا جائے، تو یہ سب ختم جائے گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

لگتا ہے کہ ٹرمپ بھی دماغی طور پر بھٹک گئے ہیں۔ شاید 2011 میں اوباما کی جائے پیدائش کے بارے میں لطیفوں پر ہونے والی شرمندگی۔

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

اچھا تو یہ ہے مصافحہ، لیکن یہ کیا؟ اوباما کا سپاٹ چہرہ اور ٹرمپ کی زیر لب مسکراہٹ۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

جب بے آرامی حد سے بڑھ گئی تو۔ ٹرمپ نے طے کیا کہ وہ اب نہیں دیکھیں گے، بس نہیں دیکھیں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

اب مزید مصافحہ نہیں ہو گا، ٹرمپ کو اس سے بہت سکون ملا ہو گا اور اب بس سر کو ہلاتے ہوئے تھوڑی بہت مسکراہٹ۔

تصویر کے کاپی رائٹ White house

لیکن مشیل اوباما اور میلانیا ٹرمپ کے درمیان علیحدہ ہونے والی ملاقات میں ایسا کچھ نہیں تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

خیر وائٹ ہاؤس سے ٹرمپ کے روانہ ہونے کے چند منٹ کے بعد اوباما نے لیبرون جیمز کی میزبانی کی، اور اُن کی روایتی مسکراہٹ لوٹ آئی۔

اسی بارے میں